سعودیہ میں خواتین کو چھیڑنے پر نئی سزا پر علمدرآمد شروع

سعودی عرب میں معاشرتی اقدار کا بڑا خیال رکھا جاتا ہے جہاں نام کی تشہیر بہت بڑی سزا تصور کی جاتی ہے۔
0
138
riyadh

ریاض: سعودی عرب نے خواتین کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے والے اوباشوں سزا دینے اور انہیں نشان عبرت بنانے کیلئے متعارف کرائی گئی نئی سزا پر عملدرآمد شروع کر دیا گیا ہے۔

باغی ٹی وی : سعودی ویب سائٹ ”سبق“ کے مطابق سعودی وزارت داخلہ نے حال ہی میں خواتین کو چھیڑنے کے جرم میں گرفتار افراد کو مقررہ سزا دینے کے علاوہ ان کے ناموں کو مقامی میڈیا پر بھی نشر کرنے کا علان کیا ہے، چند روز قبل مکہ مکرمہ پولیس نے مصری تارک وطن ولید عبدالحمید کے نام کی تشہیر بھی کی جسے ایک خاتون کو چھیڑنے پر گرفتار کیا گیا تھا، جبکہ جدہ پولیس نے ہادی حمد آل صلاح نامی سعودی شہری کو بھی ایک خاتون کو چھیڑنے پر گرفتار کیا جس کا نام میڈیا پر نشر کیا گیا۔

سعودی شہریوں نے ایسی مذموم حرکت کرنے والے افراد کے ناموں کی میڈیا میں تشہیر کے اقدام کو سراہا ہے،اس حوالے سے فیملی پروٹیکٹ پروگرام کے رکن عبد الرحمٰن القراش نے اس اقدام کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب میں معاشرتی اقدار کا بڑا خیال رکھا جاتا ہے جہاں نام کی تشہیر بہت بڑی سزا تصور کی جاتی ہے۔

ضمنی انتخابات،ن لیگ نے میدان مار لیا، وزیراعظم کی مبارکباد

ڈی جی پاکستان سپورٹس بورڈ کی برطرفی،عدالت نے وزیراعظم کو جاری کیا نوٹس

خاتون کی موٹروے پولیس اہلکار سے بدتمیزی،واقعہ پرانا،مقدمہ درج کروایا تھا،پولیس

Leave a reply