fbpx

پاکستانی روپے کی قدر یا بے قدری تفصیلات آگئیں‌

کراچی :پاکستانی روپے کی قدر یا بے قدری تفصیلات آگئیں‌ آج پاکستان میں ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کی بے قدری جاری ہے ادھرآج اوپن مارکیٹ میں ڈالرکا غصہ ابھی ٹھنڈا نہیں ہوا اورپاکستانی روپے کی ےقدری ابھی جاری ہے

پاکستان روپے کی حالت کس قدر آج گری ہے ، اس کا دیگرملکیوں کی کرنسی سے مقابلہ تصورکیا جاتا ہے ڈالر کا ریٹ بہت سے عوامل کو مدنظر رکھ کر طے کیا جاتا ہے۔ ان میں عالمی و ملکی حالات، ملکی معیشت اور دیگر عوامل شامل ہوتے ہیں۔ گزشتہ کچھ عرصے سے پاکستان میں ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ دیکھا گیا۔ جس کی وجہ سے مہنگائی میں ہوشربا اضافہ ہوا۔ اسکی بڑی وجہ تو یہ تھی کہ ہماری معیشت کا انحصار زیادہ تر امپورٹ پر تھا اور ڈالر کا ریٹ بڑھنے سے امپورٹ بل میں قابلِ قدر اضافہ ہو گیا جس کے نتیجے میں اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہونا شروع ہو گیا۔

اس کے علاوہ دیگر ملکوں کے کرنسی ریٹ پر بھی اثر پڑا۔ فارن کرنسی کی تجارت کرنے والے حضرات نے بھی مستقبل میں ڈالر کی قیمت بڑھنے کی امید پر دھڑا دھڑ ڈالر خریدنے شروع کر دیے جسکی وجہ سے اوپن مارکیٹ میں کرنسی کی طلب میں اضافہ ہوتا گیا۔

 

پاکستان میں فارن کرنسی کے زخائر کا سب سے بڑا زریعہ بیرونِ ملک کام کرنے والے لوگوں کی ترسیلات زر ہیں۔ جو محنت کش بیرون ملک محنت مزدوری کر کے پاکستان میں اپنے گھر والوں کو جو رقم بیجھتے ہیں اس سے ہمارے ملک کے زرِ مبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہو جاتا ہے اور ملکی فارن کرنسی کی ضروریات پوری ہوتی رہتی ہیں۔

کرنسی ایکسچینج ڈیلر اور فاریکس ٹریڈنگ کرنے والے کاروبای افراد بھی ڈالر کے ریٹ میں کمی بیشی کی وجہ بنتے ہیں۔ اس کام میں منافع کی شرع کافی زیادہ ہوتی ہے اس لیے بہت سے بڑے بینک اور مالیاتی ادارے بھی اس کاروبار سے منسلک ہیں۔ اسی لیے کبھی کبھار کرنسی مارکیٹ میں ڈالر اور دیگر مشہور کرنسیوں کی طلب و رسد میں کمی بیشی ہوتی رہتی ہے جس سے انکی قیمتوں میں بھی اتار چڑھائو آتا رہتا ہے۔

کرنسی ٹریڈنگ یا فاریکس ٹریڈنگ کے متعلق ہم تفصیل سے دوسری پوسٹوں میں زکر کریں گے تاکہ اس کاروبار سے منسلک لوگ یا جو یہ کاروبار کرنے کے خواہش مند ہیں انکو مناسب راہنمائی حاصل ہو سکے۔