پنجاب میں دفعہ 144 کا نفاذ , بچوں کیخلاف مقدمات کا اندراج و حکومتی نمائندوں کا کردار

پنجاب میں دفعہ 144 کا نفاذ , بچوں کیخلاف مقدمات کا اندراج و حکومتی نمائندوں کا کردار
تحریر:ادریس نواز چدھڑ
پنجاب بھر میں دفعہ 144 کا نفاذ کیا گیا ۔ جس کے تحت ندی نالوں میں نہانے پر پابندی لگائی گئی اور پولیس بھی متحرک دکھائی دے رہی ہے ۔ سرگودھا میں بھی حکومتی احکامات کی مطابق سکیورٹی برانچ سمیت پولیس نے نہر میں نہانے والوں کیخلاف کارروائی کی اور متعدد مقدمات کا اندراج کیا ۔ جس میں جن بچوں کے ابھی تک شناختی کارڈ بھی نہیں بنے ان پر بھی مقدمات کا اندراج کیا گیا ۔

جس حکومت کو نوجوانوں کے مستقبل میں اہم کردار ادا کرنا چاہیئے ۔ وہی حکومت بچوں کیخلاف بھی مقدمات درج کروا رہی ہے ۔

دوسری جانب وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف حکومتی احکامات کی دھجیاں اڑاتے ہوئے اپنے بیٹے کیساتھ گرمی دور کرنے کیلئے نہر میں نہاتے دکھائی دے رہے ہیں ۔ اور شہریوں کی بڑی تعداد یہ سب دیکھ کر حیران رہ گئی۔ ان کیخلاف تو پولیس نے کوئی کارروائی نہ کی ۔ ہر قانون , اقدام و احکامات صرف غریب پر ہی لاگو ہوتا ہے ۔ بااثر کیخلاف کبھی قانون متحرک نہیں ہوتا ۔ یہ عوام کیساتھ کیسا بھونڈا مذاق ہے کہ عوام کے بچوں کیخلاف تو مقدمات درج کئے جا رہے ہیں ۔ اور انکا مستقبل تباہ کیا جا رہا ہے لیکن حکومتی نمائندے عوام کے سامنے سرعام حکومتی احکامات کی دھجیاں بکھیر رہے ہیں ۔

لگتا ھے ہمارے ملک میں دو ریاستی قانون ہے ۔ امیر کیلئے الگ اور غریب کیلئے الگ، نہر میں نہانے پر پابندی ہونی چاہیئے۔ کیونکہ ہرسال نہروں ندی نالوں میں نہانے کے دوران ڈوبنے سےکئی قیمتی جانیں لقمہ اجل بن جاتی ہیں لیکن کیا اسکا حل بچوں کیخلاف مقدمات درج کر کے کیا جا سکتا ہے ، بچوں کے مستقبل کو تباہ کر کے حکومتی اقدامات کو پورا کرنا کہاں کا قانون ہے ۔ حکومتی نمائندے و بااثر افراد کیخلاف قانون حرکت میں کیوں نہیں آ رہا ؟، ہونا تو یہ چاہیئے تھا کہ ہر گاؤں میں بذریعہ اعلان عوام کو آگاہ کیا جاتا کہ حکومت نے نہر میں نہانے پر پابندی لگا رکھی ہے۔ اس لئے خلاف ورزی کرنیوالوں کیخلاف کارروائی کی جائیگی تاکہ عوام کو پتہ ہوتا اور وہ نہروں میں نہانے سے اجتناب کرتے ، دوسرا ان بچوں کے والدین کو بلا کر انہیں وارننگ دیکر چھوڑا جا سکتا تھا تاکہ دوبارہ ایسا کوئی بھی اقدام نہ کریں۔

پولیس ہمیشہ حکومتی اقدامات پر ہی متحرک ہوتی ہے کاش منشیات فروشوں و دیگر جرائم پیشہ افراد کیخلاف بھی ایسے ہی کارروائیاں کی جاتیں تو کیا ہی بات تھی ۔ حکومت وقت کو اس بارے سوچنے کی اشد ضرورت ہے ۔ وزیراعلی پنجاب مریم نواز شریف کو اس پر فوری نوٹس لینا چاہیئے تاکہ بچوں کے مستقبل تباہ نہ ہوں.

Leave a reply