fbpx

سعودی عرب: سیکیورٹی اہلکار کے بھیس میں پھرنے والی لڑکی گرفتار

سعودی عرب: ریاض میں سیکیورٹی اہلکار کے بھیس میں پھرنے والی لڑکی کو گرفتارکر لیا گیا-

باغی ٹی وی:”العربیہ” کے مطابق سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں سوشل میڈیا پر پوسٹ کی گئی ایک ویڈیو میں ایک لڑکی کو خاتون سیکیورٹی اہلکار کے بھیس میں دیکھا گیا جس کے بعد قانون نافذ کرنے والے ادارے حرکت میں آئے اور لڑکی کو شناخت کے بعد حراست میں لے لیا گیا ہے۔

مسجدالحرام کی صفائی کیلئے اسمارٹ روبوٹس بھی عملے میں شامل

پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون نے ایک سیکیورٹی ادارے کی خصوصی فوجی وردی پہنی ہوئی تھی لڑکی کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور اس کے خلاف قانونی کارروائی مکمل کرنے کے بعد اسے پبلک پراسیکیوشن کے حوالے کر دیا گیا ہے-

واضح رہے کہ دوسرے ممالک کی طرح سعودی عرب میں کسی دوسرے شخص کا بھیس بدلنے، سیکیورٹی ادارے ، عوامی اہلکار یا سیکیورٹی اہلکار کا روپ دھارنے والے کے خلاف سخت کارروائی کی جاتی ہے-

جمال خاشقجی کے قتل کے بعد طیب اردگان کا پہلی مرتبہ دورہ سعودی عرب کا اعلان

جس کے مطابق اور کوئی شخص کسی عوامی اتھارٹی میں کسی شخص کی نقالی کرتا ہے اسے سعودی قوانین کے مطابق تین سال سے زیادہ قید یا 50,000 ریال سے زیادہ جرمانہ یا دونوں سزائیں دی جاسکتی ہیں۔

اس کے برعکس اگر جرم کا ارتکاب قانون کے مطابق دہشت گردی یا استحصال کے ساتھ ہو وہ جاسوس یا انٹیلی جنس افسر، فوجی اہلکار کا بھیس بدلتا ہے تو اسے 10 سال تک قید اور ڈیڑھ لاکھ ریال تک جرجانہ یا دونوں سزائیں ہوسکتی ہیں۔

آسمانی بجلی گرنے سے اونٹوں کا ریوڑ ہلاک