سینیٹری ورکرز کی ضلعی انتظامیہ کے خلاف تیسرے روز کام چھوڑ ہڑتال

خانگڑھ میں سینیٹری ورکرز کی ضلعی انتظامیہ کے خلاف تیسرے روز کام چھوڑ ہڑتال جاری۔تین ماہ سے بند تنخواہوں اور ٹاون کمیٹی کی بحالی کا مطالبہ۔عوامی راج پارٹی کا سینیٹری ورکرز سے اظہار یکجہتی۔

مظفرگڑھ کے نواحی شہر خانگڑھ میں بلدیہ آفس خانگڑھ کے گیٹ پر سینیٹری ورکرز کی تیسرے روز کام چھوڑ ہڑتال جاری ہے۔سینیٹری ورکرز نے احتجاج کرتے ہوے کہا کہ تین ماہ سے انہیں تنخواہیں ادا نہیں کی جارہیں۔جس سے انکے گھروں میں فاقوں تک نوبت آگئی ہے۔سینیٹری ورکرز نے کہا کہ میونسپل کمیٹی خانگڑھ کو ٹاون کمیٹی میں تبدیل کیا گیا اور اب چند دن قبل ٹاون کمیٹی کو بھی ختم کردیا گیا۔متعدد بار ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کو تنخواہوں کی عدم فراہمی کے متعلق شکایات کی گئیں

مگر انتظامیہ کے کانوں تک جوں تک نہ رینگی۔رہنما عوامی راج پارٹی ڈاکٹر عبدالرشید شیخ نے سینیٹری ورکرز کے دھرنے میں شریک ہوکر سینیٹری ورکرز سے اظہار یکجہتی کیا اور مظفرگڑھ کی ضلعی انتظامیہ اور حکومت پنجاب کو خوب آڑے ہاتھوں لیا۔سینیٹری ورکرز نے ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ اور کمشنر ڈیرہ غازیخان سے مطالبہ کیا ہے کہ تین ماہ سے انکی بندتنخواہیں ادا کی جائیں اور خانگڑھ کی ٹاون کمیٹی کو بحال کیا جاے
مجیب الرحمان شامی باغی ٹی وی مظفرگڑھ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.