fbpx

سینیٹ میں کشمیریوں سے یکجہتی کی قرارداد منظور

سینیٹ اجلاس میں کشمیریوں سے یکجہتی کی قرارداد منظور کر لی گئی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ کا اجلاس چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی صدارت میں ہوا، قائد ایوان شبلی فراز نے سینیٹ میں قرارداد پیش کی جسے متفقہ طور پر منظور کر لیا گیا

قرارداد میں کہا گیا کہ نریندر مودی کے کشمیر میں اقدامات اقوام متحدہ کی قراردادوں کی منافی ہے۔ کشمیر میں غیر قانونی طور پر کرفیو نافذ کیا گیا ہے۔ کشمیر کا فیصلہ کشمیریوں کی مرضی اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کیئے جانے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔قرارداد میں اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کیلئے ہر فورم کا استعمال کیا جائے۔ اس سے قبل کشمیر پر بحث بھی ایوان میں جاری رہی۔ اراکین نے اس بات پر زور دیا کہ مودی حکومت کو مؤثر اور عملی جواب دینے کی ضرورت ہے۔

جے یو آئی کے سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے سینیٹ اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ آرمی پبلک اسکول پرپوری قوم پاک فوج اورحکومت ایک پیج پرتھے،جب سے کشمیرکا مسئلہ سامنے آیاتمام جماعتیں ایک ساتھ ہیں ،بعض مواقع ایسے ہوتے ہیں جس میں اپوزیشن کا اختلاف ہوتا ہے ،پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سےکوئی مثبت پیغام نہیں گیا،

بھارتی فوج کی بربریت، کشمیری نوجوان شہید،25 روز سے کرفیو،کشمیری گھروں میں محصور

کشمیریوں سے بھرپور اظہار یکجہتی کریں گے ، کشمیریوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے ، صحافتی تنظیموں کا اعلان

مولانا عبدالغفور حیدری کا مزید کہنا تھا کہ مودی الیکشن کشمیرپرلڑا ،مودی نے کہا تھا میں الیکشن جیتا توکشمیرکے آئین میں ترمیم کرونگا،وزیراعظم پاکستان نے کہا تھا کہ مودی آئیگا توکشمیرکامسئلہ حل ہوگا،عمران خان نے کہا تھا کشمیرکا بہترین حل تین حصوں میں تقسیم ہے ،مقبوضہ کشمیر میں خواتین کی عصمت دری کی جا رہی ہے

 

مشاہد حسین سید نے کہا کہ مودی نے کشمیرکا جغرافیہ تبدیل کرنےکی کوشش کی،مودی ہندوستان کو ہندوتوا بنانا چاہتا ہے ،کانگریس سمیت بہت سی سیاسی جماعتیں مودی کی سوچ کی مخالف ہیں ،ہم نے دنیا کولکھ کربھیجا ہے کشمیرپرظلم کی انتہاکی جارہی ہے،ماضی کی غلطیاں ہم نہ دہرائیں ، کشمیر کی جدوجہد مقامی ہے اسے مقامی رہنے دیں ،بھارت بے نقاب ہوا ہے ، بھارت پر کالے دھبے لگے ہیں،

 

کشمیریوں سے اظہار یکجہتی ، کل بھرپور مظاہرہ کریں گے ، اہل لاہور کشمیریوں کے لیےنکلیں‌ ؛ مبشر لقمان کا پیغام ، قوم کے نام

بہت ہو گیا ،اب گن اٹھائیں گے، کشمیری نوجوانوں کا ون سلوشن ،گن سلوشن کا نعرہ