fbpx

قومی اجلاس میں پیپلزپارٹی کی عدم شرکت ،شاہین صہبائی نےبڑا انکشاف کردیا

اسلام آباد:قومی اجلاس میں پیپلزپارٹی کی عدم شرکت ،شاہین صہبائی نےبڑا انکشاف کردیا ،اطلاعات کے مطابق فرانس کے سفیر کی ملک بدری کے معاملے پر بلائے گئے قومی اجلاس کے میں پیپلزپارٹی کی عدم شرکت کے متعلق سینیئر صحافی شاہین صہبائی نے بہت بڑا انکشاف کردیاہے۔

ذرائع کے مطابق سینئر صحافی و تجزیہ کار شاہین صہبائی نے کہا ہے کہ فرانس کے مسئلے پر پیپلزپارٹی نے بالکل ہی خود کو علیحدہ کرلیا اور اسمبلی اجلاس میں نہیں آئے جس کی وجہ یہ ہے کہ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین سابق صدر آصف علی زرداری کی جو ساری تاریخ 90 کی دہائی سے شروع ہوئی اور بعد تک چلی وہ فرانس کے ہی کرپشن کے کیسز سے شروع ہوئی تھی ،

 

 

 

سینئر صحافی و تجزیہ کار شاہین صہبائی نے کہا ہے کہ اس لیے اب پنڈورہ باکس کھولنے کے لیے آصف زرداری یا ان کی جماعت فرانس کے سفیر کو نکالنے یا نہ نکالنے کے بارے میں بات ہی نہیں کریں گے ، یہی وجہ ہے کہ انہوں نے قومی اسمبلی اجلاس سے یہ کہہ کر راہ فرار اختیار کرلی کہ آپ جانیں اور آپ کا کام جانے۔

شاہین صہبائی نے کہا کہ نے کہا کہ اب اگر آصف زرداری یا ان کی پارٹی کھڑی ہوکر فرانس کے خلاف بات کریں گے تو وہ بھی کہیں گے کہ اچھا بچوآپ کا بھی توکچہ چٹھہ ہے جو یہاں ہمارے پاس موجود ہے ، کیوں کہ 1994 میں آگسٹا سب میرینز خریدی گئی تھیں ، وہاں پر ان کے اس وقت کے صدر سرکوزی ، ایک وزیر اعظم اور دیگر بہت سے سینئر لوگ وہاں پر پکڑے بھی گئے ، جس کے بعد انہیں سزائیں ہوئیں اس میں آصف زرداری کا نام بھی آیا۔

 

 

سینئر صحافی و تجزیہ کار شاہین صہبائی نے کہا ہے کہ سال 2002ء میں کراچی میں ایک نجی ہوٹل کے سامنے فرانس کے انجینئرز کی ایک بس کو بم دھماکے کا نشانہ بنایا گیا جس میں 11 کے قریب فرانسیسی انجینئرز مارے بھی گئے تھے،

سینئر صحافی و تجزیہ کار شاہین صہبائی نے کہا ہے اس واقعہ میں یہ لوگ سب میرینز پر کام کر رہے تھے ، جن کے بارے میں پہلے تو یہ کہا گیا کہ دہشت گردی کی کارروائی میں مارے گئے

سینئر صحافی و تجزیہ کار شاہین صہبائی نے کہا ہے اصل وجہ یہ نکلی تھی کہ انہوں نے کمیشن نہیں دیا جس کا بدلہ لیا گیا ، جون 2010ء میں عامر لودھی کے گھر پر چھاپہ ماراگیا تھا وہاں سے پھر یہ ساری چیزیں باہر آئی تھیں۔