وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا یورپی یونین کے خارجہ امور کے سربراہ کو فون،مقبوضہ کشمیر،افغانستان اورکرونا سمیت اہم ایشوز پربات چیت

اسلام آباد:وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا یورپی یونین کے خارجہ امورکے سربراہ جوزف بوريل کو فون،اطلاعات کےمطابق وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے یورپی یونین کے خارجہ امور کے سربراہ جوزف بوريل سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے۔ وزیر خارجہ نے موجودہ وبائی تناظر میں مقبوضہ جموں و کشمیر کی تشویشناک صورتحال سے آگاہ کیا۔

آج یورپی یونین کے خارجہ امور اور سلامتی کی پالیسی کے اعلی نمائندے جناب جوزپ بورریل کے ساتھ ٹیلیفونک گفتگو میں وزیر خارجہ نے کوویڈ ۔19 کی وجہ سے یورپ میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر تعزیت کی۔ انہوں نے وبائی امراض سے نمٹنے کے لئے مربوط حکمت عملی کے ساتھ پیش آنے کے لئے یورپی کمیشن کی کوششوں کا اعتراف کیا۔

وزیر خارجہ قریشی نے حکومت پاکستان کی طرف سے جان بچانے ، روزگار کے حصول ، اور معیشت کو متحرک کرنے کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کی وضاحت کی۔ انہوں نے کوویڈ ۔19 سے نمٹنے کے لئے پاکستان کی حمایت میں یوروپی یونین کا شکریہ ادا کیا۔

وزیر خارجہ نے کوویڈ 19 کے بعد ، پاکستان اور یورپی یونین کے مابین تعاون بڑھانے کی خواہش کا اظہار کیا اور اس امید کا اظہار کیا کہ پاکستانی شہریوں کو کسی قسم کی پابندی یا امتیازی سلوک کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا جب کہ یوروپی یونین کے ذریعے سفری پابندیوں میں نرمی برتی جائے گی۔

دونوں رہنماوں نے یورپی یونین کی شراکت داری سے متعلق متعدد موضوعات پر تبادلہ خیال کیا ، جس میں تجارت ، جی ایس پی پلس کے اگلے مرحلے اور اسٹریٹجک منگنی منصوبہ کے ابتدائی آپریشنلائیشن شامل ہیں۔ جبکہ پاکستان سے ہنر مند انسانی وسائل کے مواقع فراہم کرتے ہیں۔

وزیر خارجہ قریشی نے ای اے ایس اے کے ذریعہ یورپ جانے والی پی آئی اے کی پروازوں کی عارضی معطلی پر تشویش کا اظہار کیا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ حکومت کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات پی آئی اے کی کارروائیوں میں اعلی سطح کی پروازوں کی حفاظت کو یقینی بنانا ہیں اور پی آئی اے اپنے فضائی کارروائیوں میں اعلی معیار اور معیار کو برقرار رکھنے کے لئے پرعزم ہے۔ وزیر خارجہ نے ای اے ایس اے کے فیصلے پر نظر ثانی کی ضرورت پر زور دیا۔

علاقائی تناظر میں ، وزیر خارجہ قریشی نے افغانستان اور افغان زیرقیادت امن اور مفاہمت کے عمل کے لئے پاکستان کے عزم کی پھر سے حمایت کا اعادہ کیا اوریقین دہانی بھی کرائی اور اس مقصد کے لئے پاکستان کی مثبت شراکت کو اجاگر کیا۔

یوروپی یونین کے خارجہ امور نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں دہشت گردی کے حملے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر وزیر خارجہ سے افسوس کا اظہارکیااوراس دہشت گردی کے واقعہ کی مذمت کی ۔

وزیر خارجہ قریشی نے یورپ یونین کے وزیرخارجہ کو پاکستان آنے کی دعوت دی جس پرانہوں نے یہ دعوت قبول کرتے ہوئے بڑی خوشی کا اظہارکیا اوروعدہ کیا کہ وہ کرونا وبا کے خاتمے کے بعد ضرور پاکستان کا دورہ کریں‌گے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.