fbpx

"مقصود چپڑاسی”کی کہانی:وزیراعظم کاانکشاف :مگرشہبازشریف عوام کے سامنےاس کی تردید نہ کرسکے

لاہور:شہبازشریف”مقصود چپڑاسی”کی کہانی کی عوام کے سامنے تردید نہ کرسکے:پرانی کہانی سنادی،اطلاعات کے مطابق وزیراعظم پاکستان عمران خان کی اپنی قوم سے براہ راست گفتگو کچھ لوگوں کو بہت ہی ناگوار گزری ،ن لیگ کے صدر شہبازشریف وزیراعظم کی طرف سے مقصود چپڑاسی والی کہانی کی تردید نہ کرسکے الٹا وہی پرانی روایتی سیاسی کہانیاں دہرانی شروع کردیں جو کہ پاکستان کی سیاست کا شیوہ رہا ہے ،

پاکستان کے حزب مخالف رہنما اور ن لیگ کے صدر میاں شہباز شریف نے وزیراعظم عمران خان کی گفتگو بہت ہی زیادہ سنگین سمجھ لیا ہے اور عوام سے گفتگو کے جواب میں کہا کہ کسان دربدر ہیں، کھاد کی سمگلنگ اوربلیک میں فروخت جاری ہے اور حکومت ہمیشہ کی طرح غائب ہے، ڈی اے پی اور یوریا کی سمگلنگ روکی جائے اور کسانوں کا استحصال بند کیاجائے ۔

شہباز شریف نے مزید کہا ہر معاملے میں حکومتی نااہلی ، نالائقی اور چور بازاری کی سزا عوام اور کسانوں کو مل رہی ہے ، کسان چیخ رہے ہیں کہ سمگلنگ ہورہی ہے، حکومت کہاں سوئی ہوئی ہے؟، عالمی منڈی میں یوریا کی قیمت زیادہ ہے تو سمگلنگ کی روک تھام کیوں نہ کی گئی؟ پیشگی انتظامات کیوں نہ ہوئے؟ ۔

انہوں نے کہا کہ یوریا کی قلت پی ٹی آئی کی بدانتظامی اور کرپشن کا شاخسانہ ہے جو اس کی پہچان بن چکی ہے ، یوریا نہ ہونے کا مطلب زرعی پیداوار میں کمی ہے جس کے نتیجے میں نئے مسائل پیدا ہوں گے۔

یاد رہے کہ آج وزیراعظم عمران خان نے جس مقصود چپڑاسی کی بات کی ہے اس کے اکاونٹ میں کروڑوں روپے کس نے بھیجے اور کس نے وصول کیے اس وقت پاکستان کے پڑھے لکھے طبقے میں یہ بہت زیادہ زیربحثت ہے ،

 

اس سے پہلے وزیراعظم کے معاون خصوصی شہزاد اکبر نے اسی حوالے سے بہت زیادہ انکشافات کیئے تھے جن میں شہبازشریف اور بیٹوں نے کس طرح اپنے ملازموں کے ذریعے اربوں روپے باہر کے ممالک میں بھجوائے تھے

 

اسی حوالے سے جس کا ذکر آج عمران خان نے شہبازشریف کے حوالے سے کیا ہے اس کے متعلق شہزاد اکبر پہلے ہی انکشافات کرچکے ہیں جو کہ کچھ اس طرح تھے