fbpx

قائد حزب اختلاف شہبازشریف سخت گرمی میں خوب برس پڑے

اسلام آباد: قائد حزب اختلاف شہبازشریف کا پارلیمانی پارٹی سے خطاب:حکومت پرخوب برسے ،اطلاعات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے پارلیمانی پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے حکومت پرالزامات کی بارش کردی

‎شہبازشریف نے اظہارافسوس کرتے ہوئے کہا کہ گھوٹکی، سندھ میں ٹرین کے تصادم کا المناک حادثہ ہوا ہے جس میں قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع ہوا اور سو سے زائد لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ یہ بڑا افسوسناک اور دل دہلادینے والا واقعہ ہے۔

‎شہبازشریف نے کہا کہ ہم متاثرہ خاندانوں سے دلی ہمدردی اور تعزیت کرتے ہیں۔ مرحومین کے لئے دعا کرتے ہیں۔ اللہ تعالی زخمیوں کو جلد صحت دے۔

‎شہبازشریف نے کہا کہ آج ملک ایک بار پھر انتہائی برے حالات سے دوچار ہے،ایک طرف معاشی بربادی ہے، بے روزگاری اور بدترین مہنگائی ہے۔ تودوسری طرف آگ برساتی گرمی میں بدترین لوڈ شیڈنگ جاری ہے ۔

‎ان کا کہنا تھا کہ بجلی کی بدانتظامی کی مجرم حکومت نے کالج اور سکول بھی کھول رکھے ہیں ،شدید گرمی اور لوڈشیڈنگ میں بچے بے ہوش ہورہے ہیں لیکن حکومت کو پرواہ نہیں ،یوں محسوس ہوتا ہے کہ ملک میں کوئی حکومت ہے ہی نہیں

‎شہبازشریف نے کہا کہ حکومت کو عوام کی بدحالی اور مشکلات سے کوئی دلچسپی نہیں اقتصادی سروے حکومت کے خلاف چارج شیٹ ہے ، اس سے صرف مایوسی اورناکامی نکلی

ان کا کہنا تھا کہ کھانے پینے کی اشیاءمیں 13 فیصد سے زیادہ مہنگائی، قرض میں اضافہ، کم ٹیکس وصولی حکومتی جرائم ہیں ،بجلی سمیت ہر چیز مہنگی کرنے کے بعد بھی حکومت کشکول اٹھائے پھر رہی ہے ،دوائی۔ علاج۔ خوراک۔ روزگار سب چھین لیا، پھر بھی حکومت کا رونا جاری ہے


اکنامک سروے حکمرانوں کی 3 سال کی کارکردگی کا بدنما آئینہ ہے ،3 سال میں عوام کو بھوک۔ افلاس اور بے روزگاری کے سوا کچھ نہیں ملا ،بڑے بڑے دعووں میں سے بہت ہی چھوٹی ذہنیت برآمد ہوئی ہے ،3 سال میں قوم نے دیکھ لیا کہ ان کے ساتھ دھوکہ ، فراڈ اور فریب ہوا

‎شہبازشریف نے کہا کہ 3 سال ضائع کرنے کے بعد اب دعوی کیاجارہا کہ اب صحیح سمت کا آغاز کررہے ہیں ،3 سال میں سمت ہی طے نہیں ہوئی تو منزل پر کب پہنچیں گے؟

‎ملک کے 3 قیمتی سال ضائع کردئیے گئے۔ مزید وقت ضائع نہیں کرنے دیں گے .تمام ارکان عوام دشمن اور آئی ایم ایف کے تیارکردہ بجٹ کو روکنے میں بھرپور کردار ادا کریں