fbpx

شہود علوی ڈرامے کی موجودہ صورتحال پر کیا کہتے ہیں؟

نامور اداکارہ شہود علوی نے حال ہی میں ڈرامے کی موجودہ صورتحال پر کھل کر کی ہے گفتگو ان کا کہنا ہے کہ ہمارے ہاں ایک سال میں دو سو ڈرامہ بن رہا ہے اور ہر ڈرامہ دوسرے کو مات دے رہا ہے. ہر ڈرامے کی کہانی دوسرے سے مختلف ہے، مختلف موضوعات پر کہانیاں بنائی جا رہی ہیں.ہمارے پاس ایک سے بڑھ کر ایک آرٹسٹ ہے. شہود علوی نے یہ بھی اعتراف کیا کہ میں مانتا ہوں کہ ایک وقت ایسا بھی آیا کہ ہمارے لوگ بھارتی ڈراموں کے مداح بن گئے تھےبھارتی ڈرامہ ان کے اعصاب پر سوار ہو گیا تھا لیکن بہت جلد ہی پاکستانی بھارتی ڈرامے سے اکتا بھی گئے ہم نے اپنے ڈرامے کو بہتر بنایا اور اپنے ڈرامے کو اصل

حالت میں واپس لیکر آئے یوں پاکستانیو‌ں نے ایک بار پھر اپنے ڈرامے دیکھنا شروع کر دئیے. شہود علوی نے کہا کہ بھارتی ڈراموں میں سوائے گلیمر کے کچھ بھی نہیں ہوتا. ہمارے ہاں ڈراموں میں گلیمر پر کم اور کہانی اور موضوع پر زیادہ توجہ دی جاتی ہے. ڈرامے کی بہتری کے لئے میں اپنا جتنا حصہ ڈال سکتا تھا میں نے ڈالا اور بہتر سے بہترین کام کرنے کی کوشش. یقینا ہر کوئی اپنے حصے کا بہترین کام کررہا ہے.ہمارا ڈرامہ بھارت میں کل بھی مقبول تھا اور آج بھی مقبول ہے.شہود علوی نے یہ بھی کہا کہ نئے فنکاروں کی کھیپ بہت زبردست ہے.