انگریزی اور ملیالم زبان کی مشہور و معروف شاعرہ اور ادیبہ کملا داس ثریا

ملیالم ادب میں ان کو مادھوی کٹی کہا جاتا تھا۔
0
101
poet

کملا داس ثریا

تاریخ پیدائش:31 مارچ 1934ء

کملا داس ہندوستان میں انگریزی اور ملیالم زبان کی مشہور و معروف شاعرہ اور ادیبہ تھیں ملیالم ادب میں ان کو مادھوی کٹی کہا جاتا تھا۔ ان کو انگریزی اور ملیالم ادب میں کمال حاصل تھا۔

خاندانی پس منظر
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کملا داس 31مارچ 1934 کو بھارت کے شہر کیرالا کے ایک برہمن خاندان میں پیدا ہوئیں۔ ان کے والد وی ایم نائر اور والدہ اس دور کی مشہور ملیالم شاعرہ بالامانیمیمّا تھیں۔ بھارتی وزیر داخلہ اے کے انتھونی بھی ان کے رشتہ دار بتا‎‎ئے جاتے ہیں۔

ادبی زندگی
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کملا داس ثریا کی ادبی زندگی کا آغاز 8 سال کی عمر میں ہی ہو گیا تھا جب انہوں نے وکٹر ہیوگو کی تحریروں کا اپنی مادری زبان میں ترجمہ کیا۔ ان کی پہلی کتاب ”سمران کلکتہ“ تھی جس نے ان کو انقلابی ادیبوں کی صف میں لاکھڑا کیا۔ ان کی تحریروں میں مردوں کے تسلط والے سماج میں خواتین کی بے بسی کا ذکر ہے اور ان کی آزادی کے لیے آواز اٹھائی گئی ہے۔ انھوں نے اپنے پڑھنے والوں کو عدم مساوات کو ختم کرنے پر سوچنے پر راغب کیا۔

قبول اسلام
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کئی برس اسلامی تعلیمات کا مطالعہ کرنے کے بعد کملا داس نے اسلام قبول کر لیا جس کے باعث بھارت اور کیرالہ کے ادبی و سماجی حلقوں میں ایک طوفان آ گیا تاہم ان کے اہل خانہ نے ان کے اس فیصلے کو قبول کر لیا۔ قبول اسلام کے بعد ان کا نام ثریا رکھا گیا۔ اپنے قبول اسلام کی بڑی وجہ جو وہ بیان کیا کرتی تھیں وہ ان کے الفاظ میں ”اسلام نے خواتین کو جو حقوق دیے ہیں وہ جان کر میں حیران ہوں میرے قبول اسلام کے پس پردہ اسلام کی جانب سے خواتین کو دیے جانے والے حقوق کا بڑا کردار ہے۔“
31مئی 2009 کو پونا کے جہانگیر ہسپتال میں ان کی وفات ہوئی ۔ اس وقت ان کی عمر 75 برس تھی۔

مشہور تصانیف
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۔ (1)این اٹروڈکشن
۔ (2)دی ڈیزیڈنٹ
۔ (3)الفابیٹ آف لسٹ
۔ (4)اونلی سول نوز ہاؤ ٹو سنگ
۔ (5)مائی سٹوری (خود نوشت)

منقول

Leave a reply