ورلڈ ہیڈر ایڈ

شہباز شریف اور بلاول بھٹوکی افغان صدر اشرف غنی سے ملاقات ،ملاقات میں کیا ہوئی بات سامنے آگئی

اسلام آباد:قومی اسمبلی میں قائدحزب اختلاف شہباز شریف اور عمران خان حکومت کے دوسرے بڑے سیاسی مخالف بلاول بھٹو کی قومی اسمبلی میں افغان صدر اشرف غنی سےعلیحدہ علیحدہ ملاقاتیں .اشرف غنی آج دو روزہ دورے پر پاکستان پہنچے تھے جہاں ان کی وزیراعظم عمران خان سے ون آن ون ملاقات ہوئی اور وفود کی سطح پر بھی مذاکرات ہوئے۔

مسلم لیگ ن کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق افغان صدر اشرف غنی نے شہباز شریف سے ملاقات میں بیگم کلثوم نواز کی وفات پر تعزیت کی اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ افغان صدر اشرف غنی نے مسلم لیگ (ن) کے منصوبوں کی تعریف کی اور کہا کہ نواز شریف نے خطے کے امن و سلامتی میں اہم کردار ادا کیا۔اعلامیے کے مطابق افغان صدر کا کہنا تھا شہباز شریف سے 1980ء میں پہلی ملاقات ہوئی تھی، یہ تعلق آج بھی رواں دواں ہے۔شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان آمد پر آپ کا خیر مقدم کرتے ہیں اور خوش آمدید کہتے ہیں، پاکستان افغانوں کا دوسرا گھر ہے، ہم آپ کو افغان صدر ہی نہیں بلکہ اپنا محترم بھائی تصور کرتے ہیں۔

شہباز شریف نے افغانستان میں نئے انتخابات کے لیے صدر اشرف غنی کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا اور مصروفیت کے باوجود ملاقات کی دعوت دینے پر تشکر کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ افغانستان میں پائیدار امن، سلامتی اور خوشحالی ہم سب کا خواب ہے، افغان اور پاکستان کے عوام افغانستان میں بدامنی سے بہت تکالیف جھیل چکے ہیں۔شہباز شریف نے افغان صدر کو نواز شریف کی طرف سے بھی خیرسگالی کا پیغام بھی پہنچایا۔

دوسری بڑی اہم ملاقات سبق صدر آصف علی زردای کے صاحبزادے بلاول بھٹو کی تھی.مسلم لیگ ن کی طرح پیپلز پارٹی نے بھی اعلامیہ جاری کرکے ملاقات کے اہم پہلووں پر روشنی ڈالی افغان صدر کے ساتھ ملاقات میں فرحت اللہ بابر اور شیری رحمان بھی شامل تھے۔اعلامیے میں بتایا گیا کہ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور پر بات چیت کی گئی۔چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے افغان امن عمل سے متعلق نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.