fbpx

شہر قائد سے عورت کی لاش برآمد،

کراچی میں منگھوپیر کے علاقے میں ایک عورت کی لاش ملی جس کو فائرنگ کر کے قتل کیا،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق کراچی میں واقع ایک علاقے منگھوپیر میں خاتون کی لاش ملی تھی۔ اس لاش کو جب پولیس نے دیکھا تو فوری طور پر تفتیش شروع کر دی اور پھر اس کے بعد پولیس نے فوری طور پر 2 عدد ملزمان کو گرفتار بھی کرنے میں کامیابی حاصل کر لی تھی۔

مزید تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوۓ بتایا جاتا ہے کہ منگھوپیر کے غلاقے میں کچھ روز پہلے ایک خاتون کی لاش پڑی ہوئی ملی تھی۔ جب اس لاش کو دیکھا تو اس کی تفتیش کی گئی تھی۔ تفتیش سے پتا چلتا ہے کہ خاتون کو فائرنگ کر کے قتل کیا گیا تھا۔اس کے علاوہ نا صرف اس علاقے سے خاتون کی لاش ملی بلکے اس کے ساتھ اس خاتون کی چھوٹی سی عمر کی بچی بھی ملی تھی۔ یہ بچی روتی ہوئی ملی تھی۔

اس واقعے کے حوالے سے ایس ایس پی ویسٹ انویسٹی گیشن ایس ایس پی عارف اسلم راؤ نے کہا کہ پولیس کی تفتیش جاری ہے اور پولیس ابھی مزید شواہد اکھٹے بھی کر رہی ہے۔ جس عورت کی لاش منگھوپیر کے علاقے میں ملی تفتیش سے پتا چلتا ہے کہ اس عورت کا نام ممتاز بیگم تھا۔اور اس رہائش منگھوپیر میں نہیں تھی۔جہاں سے اس کی لاش ملی تھی۔ بلکے اس کی رہائش گلشن اقبال میں تھی۔

مزید یہ کہ قتل ہونے والی عورت کی ماں جو کے شدید غم میں مبتلا تھی۔ اس سے جب پوچھا گیا تو اس کا کہنا تھا کہ مجھے اپنے داماد پر شک ہے۔ جس کا نام یاسر ہے۔ پولیس نے اس عورت کے بیان پر یاسر کے 2 دوستوں سمیع اور علی کو گرفتار کر لیا۔

پولیس نے جب ملزمان کی تصاویر کو مقتولہ کی چھوٹی عمر کی بچی کو دکھائی تو اس نے بھی پہچان لیا تھا۔ مزید یہ کہ ایس ایس پی کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ ملزم سمیع مقتولہ کے شوہر یاسر کا دوست تھا۔ اور بعض اوقات اس کے گھر پر پایا جاتا تھا ۔ پولیس واقعے کی ابھی مزید اور بھی تحقیقات کررہی ہے۔