fbpx

ابو ظبی: شہریوں کے لیے بغیر ڈرائیور ٹیکسی سروس کا آغاز

ابوظبی میں جدید ٹیکنالوجی سے لیس شہریوں کے لیے بغیر ڈرائیور ٹیکسی سروس کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

باغی ٹی وی :خلیج ٹائمزکے مطابق خودکار ٹیکسی کار سروس تفریحی مقام یاس آئی لینڈ میں متعارف کرائی گئی ہے، جہاں فارمولا ون ریس کا ٹریک اور فیراری ورلڈ تھیم پارک بھی موجود ہیں۔

مذکورہ سروس بیانت، جی 42 گروپ کا حصہ ہے، نے کہا کہ ڈرائیور کے بغیر سواری شیئرنگ سروس کے ٹرائل اس ماہ ابوظہبی میں شروع ہوں گے، جس کا مقصد بالآخر متحدہ عرب امارات میں ٹیکنالوجی کو متعارف کرانا ہے محکمہ بلدیات اور ٹرانسپورٹ نے خود مختار گاڑیوں کے آزمائشی استعمال کی قیادت کرنے کے لیے بیانت کے ساتھ شراکت داری کے ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

بحری جہاز کو دھکیلنے والی دنیا کی پہلی پیرافوائل پتنگ کا کامیاب تجربہ

اس حوالے سےانتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ سروس 24 گھنٹے مہیا ہو گی، جسے گوگل پلے اور آئی او ایس ایپ سٹو پر موجود ایک خصوصی ایپ کے ذریعے بک کرایا جا سکے گا۔

سروسز کے چیف ایگزیکٹو آفیسر حسن الحوسنی نے بتایا کہ یاس آئی لینڈ میں خود کار ٹیکسی سروس کا پہلا مرحلہ شروع کیا گیا جس کے شروع میں مسافر مفت ایپ کا استعمال کر سکیں گے۔

دنیا کی پہلی الیکڑک کار کب بنائی گئی؟ تحریر:عفیفہ راؤ

انھوں نے بتایا کہ ایپ سے باآسانی ٹیکسی بک کرائی جا سکے گی، لیکن ابھی یہ صرف نو مقامات کے لیے چلائی گئی ہے۔ دوسرے مرحلے میں مزید 10 گاڑیاں مختلف علاقوں میں چلائی جائیں گی۔

حسن الحوسنی نے کہا، "ہائی ٹیک پروجیکٹ کے پہلے مرحلے میں تین الیکٹرک اور دو ہائبرڈ سیلف ڈرائیونگ گاڑیاں ہوں گی جس سے کاربن کے اخراج کو کم کرنے میں مدد ملے گی یہ گاڑیاں یاس مال میں ہوٹلوں، ریستورانوں، شاپنگ مالز اور دفاتر سے مفت ٹرانسپورٹ خدمات فراہم کرتی ہیں۔”

ایلون مسک کی کمپنی کا پاکستان میں سیٹلائٹ براڈ بینڈ انٹرنیٹ شروع کرنے کا فیصلہ

انھوں نے بتایا کہ "ہم جامع حفاظتی ٹیسٹ کروا رہے ہیں تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ گاڑیاں ٹریفک کے ضوابط کے مطابق چلتی ہیں۔ ہم تمام سڑکوں پر گاڑیاں چلانے سے پہلے ہر قدم پر مکمل حفاظت اور ضوابط کے خواہاں ہیں ہم اپنے مستقبل کا تعین کرنے کے لیے ہمیشہ سرگرم رہتے ہیں۔”

حکام کےمطابق ابوظہبی میں انٹیگریٹڈ ٹرانسپورٹ سینٹر (آئی ٹی سی) ٹرانسپورٹ نیٹ ورک کے اندر خود سے چلنے والی گاڑیوں کے استعمال کے لیے ضروری انفراسٹرکچر قائم کرنے کا ذمہ دار ہوگا۔

"خودکش مشین” کو استعمال کرنے کی قانونی منظوری مل گئی

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!