fbpx

شیریں مزاری کی گرفتاری،کمیشن نے 14 جولائی کو آئی جی اسلام آبادکو طلب کر لیا

شیریں مزاری کی گرفتاری،کمیشن نے 14 جولائی کو آئی جی اسلام آبادکو طلب کر لیا

ڈاکٹر شیریں مزاری کی گرفتاری کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیشن کا معاملہ ڈاکٹر شیری مزاری انکوائری کمیشن کے سامنے پیش ہونے کے لیے پہنچ گئی

تین رکنی کمیشن کی سربراہی سابق سیکرٹری قانون جسٹس ریٹائرڈ شکور پراچہ نے کی، اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم پر کمیشن کا قیام عمل میں لایا گیا تھا سابق آئی جی ڈاکٹر نعمان خان ، سابق وفاقی سیکرٹری ڈاکٹر سیف اللہ چھٹہ بھی کمیشن میں شامل ہیں

کمیشن میں پیش ہونے کے بعد شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ میری غیر قانونی گرفتاری ہوئی اس حوالے سے کمیشن تحقیقات کرے گا کمیشن نے 14 جولائی کو آئی جی اسلام آباد کو طلب کیا ہے مجھ سے کمیشن نے پوچھ کیوں گرفتار کیا اور کس نے گرفتار کیا حکومت کی طرف سے کوئی نہیں آیا نہ ہی کوئی رپورٹ پیش کی گئی جلد ہم تحریری بیان بھی دیں گے ہم چاہتے ہیں اسمبلی مذاق بن گئی ہے الیکشن کی تاریخ دی جائے معیشت کی تین ماہ میں تباہی پھیر دی ہے پہلے الیکشن کی تاریخ پہلے آئے پھر بات ہو گی پاکستان کی سکیورٹی سے سے زیادہ ضروری ہے ان کو این ار او دیا گیاجن اداروں کا کام ہے دفاع کرنا ہے وہ دفاع کریں اداروں کا یہ کام۔ نہیں ایمپوڈ حکومت کے ساتھ مل کر ملک کی تباہی کرنا نہیں

شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ اسمبلی اب مذاق بن چکی، اب الیکشن کی تاریخ دی جائے، اگر الیکشن کی تاریخ دے دی جاتی ہے تو بہت سے معاملات پر بیٹھ کربات کی جاسکتی ہے امریکا کے کہنے پر رجیم تبدیل کرا کے راستہ روک دیا گیا کیا ان چوروں کو این آراو دینا رجیم چینج کا مقصد تھا؟ کیا ہم نے اسرائیل کو تسلیم کرناہے؟ کیا ہم نے بھارت کے ساتھ تجارت کرنا ہے

سپریم کورٹ نے دیا پی ٹی آئی کو جھٹکا،فواد چودھری کو بولنے سے بھی روک دیا

عمران خان نے کل اداروں کے خلاف زہر اگلا ہے،وزیراعظم

عمران خان کے فوج اور اُس کی قیادت پر انتہائی غلط اور بھونڈے الزامات پر ریٹائرڈ فوجی سامنے آ گئے۔

القادر یونیورسٹی کا زمین پر تاحال کوئی وجود نہیں،خواجہ آصف کا قومی اسمبلی میں انکشاف

پاک فوج پر تنقید کے مقدمہ میں ایمان مزاری نے ضمانت کروا لی