fbpx

شوہر نے 23 سال بعد دوسری لڑکی کی خاطر طلاق دے دی تھی عصمت زیدی

پاکستان کی سینئیر اور لیجنڈ اداکارہ عصمت زیدی نے انکشاف کیا کہ ان کے شوہر نے کسی دوسری لڑکی کی خاطر ان کو طلاق دے دی تھی-

باغی ٹی وی : گزشتہ 36 سالوں سے اداکاری کے جوہر دکھانے والی سینئیر اداکارہ عصمت زیدی حال ہی میں ایک ویب شو میں جلوہ گر ہوئیں جس میں انہوں نے اپنی ازدواجی زندگی سے متعلق گفتگو کی۔

عصمت زیدی نے بتایا کہ جب میری طلاق ہوئی تو لوگوں کا کہنا تھا کہ ان پر تو کوئی اثر نہیں ہوا، ایسا اس لیے تھا کیوں کہ میں چاہتی تھی کہ میرے بچوں کو محسوس نہ ہو کہ میں اداس ہو۔

انہوں نے کہا کہ طلاق سے قبل میں نے اپنے شوہر سے کہا بھی تھا کہ بچی بڑی ہورہی ہے آپ رہنے دیں ، آپ دوسری شادی کرنا چاہتے ہیں تو کریں لیکن اس گھر کو ایسے ہی رہنے دیں تاہم شوہر کی ہونے والی دوسری بیوی کا کہنا تھا کہ پہلے وہ سب ختم کریں اور یہی وجہ تھی کہ میرے شوہر نے مجھے طلاق دے دی۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ سمجھ نہیں آتا کہ خواتین طلاق کے بعد ایک ایسے شخص کے لیے کیوں روتی ہیں جو انہیں چھوڑ رہا ہو، رونا تو وہاں بنتا ہے جب آپ کا شوہر مرجائے تو آپ کو صدمہ ہوتا ہے میری بھی خواہش تھی کہ میرا گھر خراب نہ ہو، میرے شوہر مجھے طلاق نہ دیں مجھ سے تعلق نہ رکھیں لیکن میرے بچوں سے ان کے تعلقات خراب نہ ہوں تاکہ میرے بچوں پر اس کا برا اثر نہ پڑے ۔

انہوں نے کہا کہ طلاق کے بعد بھی میرے شوہر چاہتے تھے کہ میں ان کا گھر چھوڑ دوں تاکہ وہ دوسری بیوی کو لاسکیں لیکن میرے سسرال والوں نے میرا ساتھ دیا اور کہا کہ ہم نے تمہاری شادی عصمت سے کی تھی اس لیے اس گھر سے نہ کوئی جائے گا اور نہ ہی کوئی نیا شخص اس گھر میں آئے گا۔

انہوں نے دوسری شادی نہ کرنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ مجھے شادی کے 23 سال بعد طلاق ہوئی تھی میں سوچتی تھی کہ اتنا عرصہ ایک ساتھ گزارنے کے بعد اور بچوں کے باوجود میرے شوہر نے مجھے چھوڑ دیا جس پر میرا مرد ذات سے اعتبار اٹھ گیا اور اس وقت میرے بیٹے کی عمر 18 سال تھی اس نے بھی مجھے یہی بات واضح طور پر کہی تھی تاہم میں نے اس وجہ سے اور کچھ بچوں کی وجہ سے کبھی دوسری شادی کا نہیں سوچا تھا-

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.