fbpx

سندھ اسمبلی میں کورم پورا نہ ہونے کے باوجود بل کی منظوری جمہوری اقدار کے منافی ہے،اپوزیشن ارکان

سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ ،خرم شیرزمان اور ایم کیو ایم کے رہنما خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ آج سندھ اسمبلی میں کورم پورا نہ ہونے کے باوجود بل کی منظوری جمہوری اقدار کے منافی ہے ۔اسپیکر قومی اسمبلی ، چیئرمین سینیٹ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ سندھ کی صورتحال دیکھتے ہوئے آپ بھی وہاں اپوزیشن کو بات کرنے سے پہلے پوچھیں۔
کراچی دشمنی کرنے والے سندھ اور پاکستان دشمنی کے مرتکب ہیں۔کراچی میں ٹینکر مافیا کے سربراہ مراد علی شاہ اور بلاول بھٹو زرداری ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے جمعہ کو سندھ اسمبلی اجلاس کے بعد میڈیا کارنر پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔حلیم عادل شیخ نے کہا کہ کراچی دشمنی کرنے والے سندھ اور پاکستان دشمنی کے مرتکب ہیں۔
نلکے میں پانی آتا نہیں ٹینکر میں ختم نہیں ہوتا،کراچی میں ٹینکر مافیا کے سربراہ مراد علی شاہ اور بلاول زرداری ہیں۔ 90 فیصد پورے سندھ کا روینیو کراچی دیتا ہے۔اس شہر میں 250 ارب کی پانی چوری ہورہی ہے۔اگر آپ کا تعلق پی پی سے ہے تو زمینوں اور کراچی میں بھی پانی موجود ہے،میرے حلقے میں پانی فیکٹریوں میں فروخت کیا جارہا ہے ۔مرکز میں ہم سندھ کے نمائندے ہیں۔کراچی کو سیراب نہیں کیا گیا نہ سڑکیں بنائی گئیں اور نہ ہی کوئی دوسری سہولت دی گئی ہے ۔
پی پی نے آج ملک و جمہوریت دشمنی کا ثبوت دیا ہے۔خرم شیر زمان نے کہا کہ ناصر شاہ خود جلسے کررہے ہیں اور لوگوں کو ایس او پیز پر عملدرآمد کی تلقین کررہے ہیں۔سندھ حکومت کراچی کے تاجروں کو تنگ کررہی ہے۔بلوچستان پنجاب ترقی کررہے ہیں۔پیپلزپارٹی کے اپنے لوگ پانی چوری کررہے ہیں ۔ایم کیو ایم کے خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ صرف 23 ارکان نے آج بل منظور کیا ہے ۔
یہ غیر جمہوری اجلاس ہوا ہے۔اجلاس میں کورم تک پورا نہیں تھا۔اسپیکر قومی اسمبلی ، چیئرمین سینیٹ سے مطالبہ کرتا ہوںسندھ کی صورتحال دیکھتے ہوئے آپ بھی وہاں اپوزیشن کو بات کرنے سے پہلے پوچھیں۔انہوںنے کہا کہ سندھ میں اپوزیشن کی آواز کیوں دبائی جارہی ہے۔وہاں اپوزیشن لیڈر چمپئین کیوں بنا ہوا ہے۔امیر ہانی مسلم کمیشن بنا تھا۔اس کمیشن سے ایک بوند کا فائدہ نہیں ہوا۔
سندھ کے لوگ جائیں تو جائیں کہاں۔مراد علی شاہ کے حلقے کی خواتین چار کلومیٹر دور جدید ہیں پانی بھرنے جاتے ہیں ۔چیف جسٹس پانی پر جوڈیشل کمیشن بنائیں،کراچی کا ڈھائی سو ارب کا پانی بک رہا ہے۔وزیر اعظم نیب کو کاروائی کی ہدایت دیں۔انہوننے کہا کہ کے فور منصو بے کا روٹ 27مرتبہ تبدیل ہوا ہے ۔پیپلزپارٹی کراچی میں کے فور منصوبہ نہیں چاہتی تھی۔انہوںنے کہا کہ پبلک سروس کمیشن سندھ دشمن ادارہ ہے۔پبلک سروس کمیشن سے متعلق فیصلے پر کراچی میں مٹھائیاں بانٹی گئیں ۔سندھ پبلک سروس کمیشن سے متعلق عدالتی فیصلے پر ہم بھی اپیل میں جائیں گے۔