سندھ، بلوچستان کے بعد پنجاب میں بھی مساجد میں نماز کی ادائیگی بارے بڑا حکم جاری

0
97

سندھ، بلوچستان کے بعد پنجاب میں بھی مساجد میں نماز کی ادائیگی بارے بڑا حکم جاری

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پنجاب میں بھی شہریوں کی مساجد میں نماز ادا کرنے پر پابندی عائد کر دی گئی

محکمہ اوقاف پنجاب کی جانب سے نئی ایڈوائزری جاری کردی گئی، پنجاب حکومت کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پنجاب بھر کی تمام مساجد میں صرف 3 سے 5 افراد نماز ادا کریں،خطیب، امام، مؤذن اور خدمت گار مسجد میں نماز ادا کریں،شہری نماز جمعہ و نماز پنجگانہ گھر پرادا کریں تاکہ موذی مرض سے بچا جا سکے،

حکومت پنجاب کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا کہ خطیب، امام مسجد، موذن اور کیئر ٹیکر نماز ادا کریں گے، باقی افراد گھروں میں نماز ادا کریں، لوگ گھروں میں نمازیں ادا کریں تاکہ کرونا وبا سے محفوظ رہ سکیں، حکومت پنجاب نے طبی ماہرین کی ہدایات کی روشنی میں اقدام اٹھایا۔

نماز جمعہ پر پابندی، طاہر اشرفی نے کیا بڑا اعلان، طبی عملے کو کیا سلیوٹ

سندھ حکومت کا بڑا فیصلہ، نماز جمعہ کے اجتماعات پر پابندی

قبل ازیں سندھ اور بلوچستان حکومت نے بھی اسی طرح کے اھکامات جاری کئے تھے، سندھ حکومت نے گزشتہ روز پابندی لگائی تھی جبکہ بلوچستان حکومت نے آج صبح پابندی لگائی تھی،

کراچی پولیس کی جانب سے شہر بھر کی تمام مساجد کو باجماعت نمازوں کی ادائیگی پر پابندی سے متعلق نوٹس جاری کر دیئے گئے ہیں۔حکومت سندھ کی جانب سے کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر مساجد میں نماز کے اجتماعات پر پابندی عائد کرنے کے حکم کے بعد کراچی پولیس کی جانب سے جاری نوٹس میں کہا گیا ہے کہ پابندی کے حوالے سے شہر بھر کی تمام مساجد کی انتظامیہ کو آگاہ کر دیا ہے،پولیس کا کہنا ہے کہ حکومت کے حکم پر عمل درآمد کرانا مساجد انتظامیہ کی ذمہ داری ہے، اگر حکم کی خلاف ورزی کی گئی تو مساجد انتظامیہ کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی.

سندھ میں مساجد میں عوام کی جانب سے نماز کی ادائیگی پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی,سندھ کے صوبائی وزارت داخلہ نے اس حوالہ سے نوٹفکیشن جاری کر دیا گیا ہے جس کے مطابق مساجد میں امام، مؤذن اور خادم کو صرف نماز پڑھنے کی اجازت ہو گی،عوام کو مساجد میں نہیں آ نے دیا جائے گا، مساجد میں اذان ہو گی او رامام کی قیادت میں ٹوٹل 3 افرد نماز ادا کریں گے،پیش امام اور مساجد کی دیکھ بھال کرنے والے افراد باجماعت نماز ادا کر سکیں گے

محکمہ داخلہ سندھ کا کہنا ہے کہ تمام علما کرام اور ڈاکٹرز کی مشاورت سے پابندی کا فیصلہ کیا،وبائی امراض کے ایکٹ 2014کے تحت پابندی عائد کی گئی،خلاف ورزی پر دفعہ 188کے تحت کارروائی ہوگی،پولیس ،رینجرز اور قانون نافذ کرنے والوں کو کارروائی کا اختیار ہوگا

Leave a reply