fbpx

سندھ میں لاک ڈاون اورپھرپابندیاں :سمجھ سے بالاترنہیں مانتے:وفاق کا اعتراض

کراچی :سندھ میں لاک ڈاون اورپھرپابندیاں :سمجھ سے بالاترنہیں مانتے:وفاق کا اعتراض،اطلاعات کے مطابق حکومت سندھ نے کرونا کے بڑھتے ہوئے پھیلاؤ کے مد نظر 31 جولائی سے 8 اگست تک مختلف پابندیوں کا نفاذ کیا ھے۔

سندھ حکومت کی جانب سے جاری کیئے جانے والے نوٹیفیکیشن میں کچھ سیکٹرز کو دی جانے والی استثنی کے علاوہ وفاق کےزیر انتظام مندرجہ ذیل سیکٹرز بھی پہلے سے تعین کردہ SOPs کے مطابق کام کرتے رہیں گے۔

فضائی آپریشن معمول کے مطابق پہلے سے وضع کردہ SOPs کے مطابق جاری رہیں گے، ریلوے 70 فیصد مسافروں کے ساتھ اپنا آپریشن جاری رکھے گی۔

وفاق کے زیرانتظام دفاتر میں عملے کی تعداد کو کم سے کم اور کرونا SOPs کے مطابق فرائض سر انجام دینے کی ھدایات جاری کردی گئی ہیں‌

ادھر ذرائع کےمطابق یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاکستان سٹاک ایکسچینج اوراس سے متعلقہ سروسز معمول کے مطابق کام جاری رکھیں گی

ادھرکچھ پابندیاں‌ ہٹا بھی لی گئی ہیں ، اس حوالے سے یہ بھی کہا جارہا ہےکہ نوٹیفکیشن کے مطابق سندھ حکومت نے ڈبل سواری پر عائد پابندی اٹھا لی،

بیکری، ڈیری ملک شاپز پر کوئی وقت لاگو نہیں ہوگا، دودھ کی گاڑیوں سمیت دیگر اہم سامان کی ترسیل والی گاڑیوں کو نہیں روکا جائے، گاڑیوں کے عملے کا ویکسیینیشن کارڈ چیک کر کے جانے دیا جائے۔ ریسٹورنٹ ہوم ڈیلیوری کے تحت کام کرسکتے ہیں۔

نوٹیفیکیشن کے مطابق چنگچی، ٹیکسی اور رکشہ کو بھی سڑکوں پر آنے کی اجازت دیدی گئی، گنجائش سے زائد افراد رکشہ، چنگچی اور ٹیکسی میں سوار نہ ہوں، گاڑی میں دو افراد کی سواری پر سے بھی پابندی اٹھالی گئی، دودھ اور بیکری کی دکانوں کے عملے کا ویکسینیٹڈ ہونا لازمی ہے