fbpx

سندھ ہائیکورٹ کا کراچی میں بلدیاتی انتخابات یقینی بنانےکاحکم

کراچی :سندھ ہائیکورٹ نے 23 اکتوبر کو کراچی میں بلدیاتی انتخابات یقینی بنانے کا حکم دیتے ہوئے الیکشن کمیشن کو تحریری بیان اور الیکشن کا نوٹیفیکشن بھی پیش کرنے کا حکم دیا ہے . میڈیا رپورٹس کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں کراچی اور حیدر آباد میں بلدیاتی انتخات میں تاخیر کیخلاف درخواستوں پر سماعت ہوئی،پی ٹی آئی اور جماعت اسلامی نے بلدیاتی انتخابات میں تاخیر سے متعلق درخواست دائر کیں .

لاء آفیسر نے بتایا کہ کراچی میں بلدیاتی انتخابات کرانے کیلئے 23 اکتوبر کی تاریخ مقرر کی گئی ہے . عدالت نے قرار دیا کہ آپ یہ بات تحریری طور پر لکھ کر دیں . لاء آفیسر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن نے پریس ریلیز کے ذریعے اعلان کیا ہے،مجھے وقت دیں تاکہ الیکشن کمیشن سے ہدایت لے سکوں .

سندھ ہائیکورٹ نے 23 اکتوبر کو کراچی میں بلدیاتی انتخابات یقینی بنانے کا حکم دے دیا،جبکہ الیکشن کمیشن کو تحریری بیان اور الیکشن کا نوٹیفیکشن پیش کرنے کا حکم دیا ہے .

درخواستوں میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ الیکشن کمیشن نے بلدیاتی انتخابات نے جان بوجھ کر تاخیر کی . واضح رہے کہ اس سے پہلے الیکشن کمیشن آف پاکستان نے کراچی کے تمام 7 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کیلئے 23 اکتوبر کو پولنگ کا اعلان کیا . الیکشن کمیشن آف پاکستان کے مطابق کراچی ڈویژن میں بلدیات انتخابات 23 اکتوبر کو ہوں گے . حیدرآباد ڈویژن میں بلدیاتی انتخابات کیلئے پولنگ کے حوالے سے صوبائی الیکشن کمیشن سے رپورٹ طلب کرلی گئی،الیکشن کمیشن کے مطابق رپورٹ آنے کے بعد بلدیاتی انتخابات کیلئے پولنگ کا فیصلہ کیا جائے گا .

یاد رہے کہ کراچی اور حیدرآباد کے 16 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کیلئے پہلی بار 27 جولائی جبکہ دوسری بار 28 اگست کو پولنگ کا اعلان کیا گیا تھا تاہم بارشوں اور سیلابی صورتحال کے باعث پولنگ ملتوی کردی گئی تھی . سندھ میں بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ ممکنہ بارشوں اور خراب موسم کے باعث 20 جولائی کو ملتوی کردیا گیا تھا .

شہباز گل کی گرفتاری، پی ٹی آئی کے ڈنڈا بردار کارکن بنی گالہ پہنچ گئے

شہباز گل کی گرفتاری پی ٹی آئی نے عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے شہباز گل ضمانت کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا