سندھ کابینہ کا بڑا فیصلہ، اساتذہ کے تبادلوں پر پابندی ختم

سندھ کابینہ نے نئی پوسٹنگ پالیسی کی منظوری دیتے ہوئے نئے تعلیمی سال سے اساتذہ کے تبادلوں سے پابندی ختم کرنے کی منظوری دیدی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اساتذہ کے دیہی سے شہری علاقوں تبادلوں پر بھی 2018 سے پابندع ہے ، تبادلوں پر پابندی کے باعث بہت سے مسائل پیداہوئے ہیں۔ تبادلوں پر پابندی کے باعث سکول بند ہورہے ہیں، جہاں اساتذہ ریٹائرڈ ہوگئے ہیں۔فیمیل ٹیچرز کی شادی کے باعث بھی ٹرانسفر کی درخواستیں بھی زیر التوا ہیں۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ تبادلوں پر پابندی کے باعث سکول بھی کھولنا دشوار ہوگیا ہے۔تبادلوں پر پابند ی کے باعث پرائمری سکولوں میں 30 بچوں پر ایک استاد کے ریشو بھی برقرار رکھنا مشکل ہوگیا ہے۔ سندھ کابینہ نئے تعلیمی سال سے اساتذہ کے تبادلے سے پابندی ختم کرنے کی منظوری دیدی۔طلبہ کے تناسب کی بنیادپر محکمہ تعلیم کریگا خواتین اساتذہ کی پوسٹنگ ان کے گھر کے قریب کی درخواست کو ترجیح دی جائے گی۔کسی سکول سے استاد کی ریٹائرمنٹ کی صورت میں دوسرے سکول سے ٹیچر کا تبادلہ کیا جائے گا ٹرانسفر کیس ویڈ لاک پالیسی، بیوہ یا بیمار اساتذہ کے تبادلے درخواست کو بھی ترجیح دی جائے گی ۔سکول ایجوکیشن ڈپارٹمنٹ اساتذہ کے ٹرانسفر مارچ میں نوٹیفائی کرے گا اساتذہ اپنے تبادلے کے لئے جنوری کے دوسرے ہفتے میں ای-اپلیکیشن فائل کرے گا ای-اپلیکیشن کی جانچ پڑتال ہوگی اور تعلیمی سال شروع ہونے سے پہلے ٹرانسفر ہوجائے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.