سندھ میں‌ 24 گھنٹوں میں کرونا کے 340 نئے مریض سامنے آ گئے، ہلاکتوں میں بھی اضافہ

سندھ میں‌ 24 گھنٹوں میں کرونا کے 340 نئے مریض سامنے آ گئے، ہلاکتوں میں بھی اضافہ

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے صوبہ سندھ میں کرونا وائرس کے مریضوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے

کرونا وائرس کے سندھ میں 24 گھنٹوں میں 340 مزید افراد سامنے آئے جس کے بعد سندھ میں کرونا کے مریضوں کی تعداد 2008 ہو گئی ہے

سندھ میں کرونا سے ہلاکتیں 45 ہو چکی ہیں،صوبہ بھر میں کل تک 1626 ٹیسٹ کئے گئے ، 340 کیس پوزیٹو آگئے ہیں، سکھر قرنطینہ میں 1388 زائرین کو لایا گیا ۔ 280 زائرین کا ٹیسٹ مثبت آیا

قبل ازیں وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے سکھر کا دورہ کیا، وزیراعلی نے سکھر قرنطینہ سینٹر میں بہتر انتظامات رکھنے پر انتظامیہ کی کارکردگی کی تعریف کی اور ضرورت مند، مزدور اور یومیہ اجرت پر کام کرنے والوں کے گھروں پر راشن پہنچانے کی ہدایت کی، وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ راشن کی کوالٹی بہتر ہونی چاہیے.

قبل ازیں وزیر اعلیٰ سندھ سکھر شہر کے دورے کے لیے گاڑی خود ڈرائیو کر کے ایئر پورٹ سے روانہ ہوئے، ایئر پورٹ پر وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے اپنی گاڑی روک کر پولیس موبائلز بھی واپس بھجوا دیں۔ وزیر اعلیٰ نے گاڑی سے اتر کر کہا کہ انھیں کوئی پروٹوکول نہیں چاہیے، مجھے شہر دیکھنے دیں۔

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کرونا وبا سے متعلق بنائے گئے ایس او پی کے تحت خود گاڑی ڈرائیو کر رہے ہیں، اور ان کے ساتھ گاڑی کی پچھلی سیٹ پر صرف وزیر اطلاعات سندھ ناصر شاہ بیٹھے ہیں

وزیراعلیٰ سندھ نے عمران خان کی بجائے بلاول کو وزیراعظم کہہ دیا،کہا سندھ میں لاک ڈاؤن سخت ہے تو نیویارک جا سکتے ہو

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.