fbpx

سراج الحق کی عمران خان سے ملاقات

جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کی عمران خان سے ملاقات ہوئی ہے’

سراج الحق کی سربراہی میں جماعتِ اسلامی پاکستان کے وفد نے چیئرمین تحریک انصاف سے ملاقات کی، مرکزی نائب صدر تحریک انصاف سینیٹر اعجاز چودھری، سندھ کے صدر علی حیدر زیدی سمیت دیگر موجود تھے ،جماعت اسلامی کے وفد نے عمران خان کی عیادت اور مزاج پرسی کی اور عمران خان سمیت حملے میں زخمی ہونے والے کارکنان کی جلد و مکمل شفایابی کیلئے دعا کی، جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے واقعہ کے ذمہ داروں کے تعین اور محاسبے کیلئے چیئرمین تحریک انصاف کے مؤقف کی روشنی میں اعلیٰ سطحی تحقیقات کی ضرورت پر زور دیا، جماعت اسلامی کے وفد میں لیاقت بلوچ بھی شامل تھے،

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کا لانگ مارچ کا فیصلہ اپنا ہے نہ شرکت کی دعوت دی نہ شرکت کریں گے ہم نے سابق وزیراعظم عمران خان کی عیادت کی اور صحت یابی کے لئے دعا بھی کی۔ عمران خان سے ملاقات میں سیاست پر بھی بات ہوئی پاکستان جمہوری ملک ہے اس کے استحکام کے لئے الیکشن اصلاحات ضروری ہیں تمام سیاسی جماعتوں کو الیکشن ریفارمز پر اتفاق رائے ہونا چاہیے

واضح رہے کہ عمران خان وزیرآباد میں لانگ مارچ کے دوران ہونیوالے مبینہ حملے کے بعد شوکت خانم منتقل ہو گئے تھے، ہسپتال والوں نے ڈسچارج کیا تو عمران خان زمان پارک آ گئے، عمران خان کے گھر کے نواح میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں، پارٹی رہنماؤں کی عمران خان سے ملاقاتوں کا سلسلہ بھی جاری ہے،

 عمران خان کو پتہ تھا کہ انہیں ہٹانے کی منصوبہ بندی جاری ہے،

شوکت خانم میں عمران خان کا علاج جاری ہے،میڈیکل رپورٹس تسلی بخش قرار دے دی 

شوکت خانم کے باہر سے مشکوک شخص گرفتار

جس کو پنجاب کا سب سے بڑا ڈاکو کہتا تھا اسے ڈاکو کی وزارت اعلیٰ کے نیچے عمران خان پر حملہ ہوا

پاکستان کو ایک مرتبہ پھر انتہا پسندی اور مذہبی جنونیت کا سامنا