سوشانت سنگھ راجپوت خود کشی سے قبل بنا تکلیف کی موت سرچ کیا کرتے تھے ممبئی پولیس

سوشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کے حوالے سے تحقیقات کرنے والی ممبئی پولیس کا کہنا ہے کہ سوشانت کی موت سے کچھ ماہ قبل سے اپنے بائی پولر ڈس آرڈر کا علاج کروا رہے تھے-

باغی ٹی وی : بھارتی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق پولیس کو سوشانت کے ڈاکٹر نے بتایا کہ سوشانت بائی پولر ڈس آرڈر(ایک نفسیاتی بیماری جس کی وجہ سے مریض کبھی تو بہت خوش ہوتا ہے اور کبھی افسردہ ہوجاتاہے) کا علاج کرواتے رہے تھے-

پولیس کا کہنا تھا کہ سوشانت نے اپنی موت سے قبل بنا تکلیف کے موت کے حوالے سے گوگل سرچ کیا کرتے تھے اور اپنی سابق منیجر ڈیشا سالیان کا نام بھی گوگل کیا تھا ڈیشا نے 8 جو ن کو ایک عمارت کی 14ویں منزل سے کود کر خودکشی کرلی تھی۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ سوشانت اپنی زندگی کے آخری دنوں میں ذہنی بیماری میں مبتلا تھے اپنی زندگی کے آخری چند گھنٹوں کے دوران انھوں نے اپنے نام سے گوگل سرچ کیا یہ تفصیلات ان کے موبائل فون اور لیپ ٹاپ سےسامنے آئیں-

پولیس کا کہنا تھا کہ گوگل سرچ سے یہ انکشاف ہوا کہ انہیں یہ پریشانی تھی کہ ڈیشا کی موت کے حوالے سے ان کے بارے میں قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔

ممبئی پولیس چیف پرم بھیر سنگھ نے میڈیا سے بات چیت کے دوران کہا کہ یہ بات سامنے آئی ہے کہ انھیں بائی پولر ڈس آرڈر تھا اور انکا علاج چل رہا تھا اور وہ دوائیں بھی لے رہے تھے، لیکن ہماری تحقیقات کا محور وہ حالات جاننا ہیں جن کی وجہ سے ان کی موت واقع ہوئی۔

سوشانت سنگھ راجپوت کی سابق گرل فرینڈ اداکارہ ریا چکربورتی نے اپنے خلاف مقدمہ دائر ہونے پر سپریم کورٹ کا رُخ کر لیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.