fbpx

سوشل میڈیا پر اہم شخصیات سے دوستی کر کے بھاری رقم بٹورنے والی نوسرباز حسینہ پکڑی گئی

سوشل میڈیا پر اہم شخصیات سے دوستی اور تعلقات قائم کرکے انہیں جال میں پھنسانے اور مقدمات درج کرا کر بھاری رقم بٹورنے والی نوسرباز حسینہ پکڑی گئی

لاہور پولیس نے مختلف شخصیات پر زیادتی (ریپ)کے مقدمات درج کرا کران سے پیسے ہتھیانے والی ملزمہ کاسراغ لگا لیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون مختلف افراد کے خلاف زیادتی کا نشانہ بنانے کے 10 سے زائد جھوٹے مقدمات درج کراچکی ہے خاتون کا اصل نام عظمی شہزادی ہے اور وہ رحیم یار خان کی رہائشی ہے جبکہ پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہورمیں شفٹ ہو چکی ہے۔عظمی شہزادی موبائل فون اور دیگرسوشل میڈیا کی مدد سے سیاسی افراد اور اعلیٰ افسران کو اپنے جال میں پھنسا کر ان سے دوستی اور تعلقات استوار کرتی اور بعد میں ان کے خلاف تھانے میں مقدمہ درج کروانے کے نام پر بلیک میل کر کے بھاری رقوم وصول کرتی تھی جبکہ رقم نہ دینے والے افراد کے خلاف عظمی شہزادی،تحریم، خنسہ ،شازیہ اور طیبہ سمیت مختلف ناموں سے مقدمات درج کروا کر ان سے ڈیل کرتی تھی۔

دوسری جانب ایک رپورٹ کے مطابق پولیس زرائع کا کہنا ہے کہ خاتون نے لاہور میں محکمہ داخلہ کے افسر،انکم ٹیکس افسر اور ایک ایم پی اے کے خلاف بھی مقدمات درج کرائے ہیں جبکہ یہ تمام مقدمات جھوٹے ثابت ہونے کے باعث خارج کر دئیے گئے ہیں جبکہ بعض اہم شخصیات خاتون کو بھاری رقم ادا بھی کر چکی ہیں۔ پولیس تفتیش میں یہ انکشاف ہوا ہے کہ خاتون کے خلاف فراڈ، چوری، دھمکیوں اور دھوکہ دہی کے مختلف تھانوں میں 7 مقدمات درج ہو چکے ہیں اور اس کا ایک ساتھی جیل جا چکا ہے

واضح رہے کہ لاہور مین جنسی جرائم میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے، آئے روز خواتین کے ساتھ زیادتی، چھیڑ چھاڑ کے واقعات بڑھ رہے ہیں لاہور میں دوسرے شہر سے آئی ایک اور خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے ایک ملزم کو گرفتار کرلیا ہے، میڈیا رپورٹس کے مطابق لاہور کے رہائشی ملزم نے اوکاڑہ کی خاتون سے فون پر دوستی کی متاثرہ خاتون لاہور آئی تو ملزم شرافت نے دو دوستوں کے ساتھ مل کر خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا