fbpx

سٹینڈ فارما کا انجکشن پیراسٹ غیر معیاری قرار، ڈریپ الرٹ جاری

اسلام آباد: ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (ڈریپ) نے سٹینڈ فارما کا انجکشن پیرا سٹ ( پیراسیٹامول ) غیر معیاری قرار دیتے ہوئے الرٹ جاری کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈریپ نے کمپنی کو پیراسٹ انجکشن فوری طور پر مارکیٹ سے اٹھانے کی ہدایت کرنے کے علاوہ پیرا سٹ 1 گرام اور 100 ایم ایل کا بیچ نمبر CJ170 استعمال کرنے والوں کو بھی ہدایت جاری کر دی ہے۔

گوجرہ: دکانوں کی تعمیرکے دوران مندرکی چھت گرگئی

ڈریپ کی جانب سے جاری کئے گئے الرٹ میں کہا گیا ہے کہ پیراسٹ انجکشن بیچ نمبر CJ170 استعمال کرنے والے فوری اپنے معالج سے رابطہ کریں، مذکورہ انجکشن میں کالے رنگ کے ذرات انسانی آنکھ سے با آسانی دیکھے جا سکتے ہیں۔ ڈریپ حکام کا کہنا ہے کہ سپلائیرز کو اس ضمن میں سخت ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ میڈیکل سٹورز سے فوری اس انجکشن کو اکٹھا کر کے متعلقہ کمپنی کو واپس دیں۔

کراچی: مختلف کاروائیوں میں 13 ملزمان گرفتار

کیا آپ سر درد یا بخار کے لیے پیراسیٹامول کی گولی کھانے کے عادی ہیں؟ آپ یقیناً سوچ رہے ہوں گے کہ یہ سوال کیوں کیا جا رہا ہے۔اس کی وجہ حال ہی میں پیراسیٹامول کے استعمال پر ہونے والی ایک نئی تحقیق ہے جس کے مطابق بلڈ پریشر یا فشار خون کے عارضے میں مبتلا ایسے مریضوں میں دل کا دورہ پڑنے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں جو پیراسیٹامول کی گولی استعمال کرتے ہیں۔

یونیورسٹی آف ایڈنبرگ کے محققین کی ایک تازہ تحقیق کے مطابق ماہرین امراض قلب کو زیادہ عرصے کے لیے مریضوں کو یہ دوائی دینے سے پہلے اس کے فوائد اور نقصانات پر غور کرنا چاہیے۔لیکن اگر اس دوا کا استعمال صرف سر کے درد یا بخار کے لیے کیا جا رہا ہے تو اس میں کوئی خطرے والی بات نہیں۔

ٹھٹھہ :دھابیجی ،زیادتی کے بعد قتل ہونے والے لڑکے ملزمان کی عدم گرفتاری پراحتجاج

لیکن کچھ ماہرین ایسے بھی ہیں جن کا ماننا ہے کہ اس تحقیق کے نتائج کی تصدیق کے لیے زیادہ عرصے تک زیادہ افراد پر اس دوائی کے اثرات کی تحقیق ضروری ہے۔

پیراسیٹامول مضر صحت بھی ہو سکتی ہے؟
واضح رہے کہ پیراسیٹامول دنیا بھر میں درد سے آرام کے لیے عام استعمال ہونے والی دوائی ہے۔ لیکن یہ دوائی طویل المدت تکلیف یا درد کے لیے بھی دی جاتی ہے حالانکہ زیادہ عرصے کے لیے یہ فائدہ مند ہے بھی یا نہیں، اس کے شواہد کم ہیں۔

اس دوائی کا استعمال کتنا عام ہے؟ اس کی ایک مثال یہ ہے کہ سکاٹ لینڈ جیسے ملک میں ہر دس میں سے ایک شخص کو 2018 میں درد کے لیے پیراسیٹامول دی گئی۔

لیکن اس حالیہ تحقیق کے مطابق اگر کسی شخص کو ہائی بلڈ پریشر ہو، جو عام طور پر برطانیہ میں ہر تین میں سے ایک شخص کو ہوتا ہے، تو ایسے شخص کے لیے اس دوا کا استعمال مضر صحت بھی ہو سکتا ہے۔

اس تحقیق کے دوران 110 رضاکاروں کی مدد کی گئی جن میں سے تقریبا دو تہائی افراد یہ دوا ہائی بلڈ پریشر یا ہائیپر ٹینشن کے لیے استعمال کر رہے تھے۔