زید حامد کی کشمیرمتعلق 12 سال پہلے کہی گئی بات ثابت ہو گئی

زید حامد پاکستان کے نامور دانشور اور دفاعی تجزیہ نگار ہیں جو دبنگ انداز میں حقائق کو ٹیلی ویژن پر بیان کرنے کے لحاظ سے جانے جاتے ہیں زید حامد شاید پاکستان کے وہ واحد دفاعی تجزیہ نگار ہیں جنہوں نے افغان مجاہدین کے ساتھ مل کرروسی افواج کیخلاف جنگ بھی لڑی ہوئی ہے، زید حامد نے 2007 میں برطانوی صحافی اناتول لیون کو آزادی کشمیر کے لائحہ عمل اور بھارت کی کشمیر کے بارے پالیسی کے متعلق انٹرویو دیا جو کہ اناتول لیون کی کتاب "پاکستان، اے ہارڈ کنٹری” اور حسین حقانی کی کتاب "ری ایمیجننگ پاکستان” میں شائع ہوا، اناتول لیون اپنی کتاب میں لکھتا ہے زید حامد کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل غزوہ ہند ہے، غزوہ ہند کی نشاندہی حضور اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے کی ایک حدیث مبارکہ میں بھی ہے زید حامد کیمطابق پاکستان جلد ہندوستان فتح کرے گا اور ریڈیو پاکستان کی ایک برانچ نیو دہلی میں کھولی جائے گی
یادرہے یہ بات زید حامد نے آج سے 12 سال پہلے کہی تھی کی بھارت کشمیر سے مسلمانوں کا نام و نشان مٹانے اور ان کی اکثریت والے علاقے کو ان کیلئے اقلیت والا علاقہ بنانے پر تلا ہوا ہے 5 اگست 2019 کو انڈیا نے کشمیر کی خصوصی خیثیت ختم کرکے زید حامد کی بات ثابت کردی ہےانڈیا ہٹلر کی پالیسی پر عمل پیرا ہو کر کشمیریوں کی نسل کشی کرے گا تو دوسری طرف اسرائیل کی پالیسی پرعمل پیرا ہو کر مسلم اکثریتی علاقے کو اقلیتی علاقے میں تبدیل کرنے کی کوشش کرے گا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.