اسٹیل ملز سے 30 لاکھ ٹن تانبا اور پیتل چوری کا کیس ایف آئی اے کو ارسال کردیا گیا

0
22

سٹیل ملز سے 30 لاکھ ٹن تانبا اور پیتل چوری کا کیس ایف آئی اے کو ارسال کردیا گیا
حکومت نے پاکستان اسٹیل ملز سے 30 لاکھ ٹن تانبا اور پیتل چوری کا کیس وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کو ارسال کردیا۔ قومی اسمبلی اجلاس میں پارلیمانی سیکرٹری صنعت و پیداوار شاہدہ رحمانی نے بتایا کہ اسٹیل ملز سے تین ملین ٹن کاپر اور براس چوری کا کیس ایف آئی اے کو بھجوا دیا ہے۔

شاہدہ رحمانی نے وضاحت کی کہ اس چوری کی مالیت دس ارب روپے نہیں بلکہ 47 لاکھ روپے ہے، پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) بھی اس معاملے کی تحقیقات کررہی ہے، چوری میں تین ملازمین ملوث ہیں، جن میں سے ایک کو برطرف کردیا گیا ، دوسرے سے 15 لاکھ 70 ہزار کی وصولی کی جارہی ہے جبکہ تیسرے ملازم کے خلاف انکوائری مکمل ہونے والی ہے۔ شاہدہ رحمانی کی بریفنگ کے بعد ڈپٹی اسپیکر نے معاملہ قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کو بھجوا دیا۔
مزید یہ بھی پڑھیں؛ بلبل پنجاب کا خطاب پانے والی گلوکارہ اور شاعرہ کا یوم پیدائش
پاکستان اور ترکیہ کے تعلقات تزویراتی شراکت داری کے نئے دور میں داخل. وزیر اعظم
لاپتہ افراد کیس، تحقیقات مکمل کی جائیں، عدالت
خیال رہے کہ ملکی تاریخ کی سب سے بڑی چوری سامنے تھی جس میں پاکستان اسٹیل سے تقریباً 10 ارب روپے مالیت کا میٹریل چوری ہونے کا انکشاف ہوا تھا. پاکستان اسٹیل میں ملکی تاریخ کی سب سے بڑی چوری جس کی تحقیقات کے لیے وفاقی وزارت صنعت و پیداوار نے ایف آئی سے رجوع کرلیا گیا تھا۔ وفاقی وزارت صنعت و پیداوار کی جانب سے ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے کو خط لکھا گیا تھا جس میں پاکستان اسٹیل کے مختلف ڈپارٹمنٹس میں کی جانے والی چوریوں میں ملوث عناصر کو منظر عام پر لانے کے لیے شفاف اور فوری تحقیقات کی درخواست کی گئی تھی.

جبکہ خط میں کہا گیا تھا کہ پاکستان اسٹیل کے مختلف ڈپارٹمنٹس کے علاوہ مین پلانٹ بھی چوروں کی رسائی سے محفوظ نہیں رہا جو کہ سیکیورٹی عملے کی ملی بھگت کے بغیر ممکن نہیں۔ پاکستان اسٹیل کی اندرونی تحقیقات میں سینئر انتظامی افسران کے ملوث ہونے کے شواہد ملے تھے جو وفاقی وزارت صنعت و پیداوار نے ایف آئی اے کو فراہم کردیے تھے.

Leave a reply