fbpx

خودکشی کر کے موت کو گلے لگانے والی جیا خان کی والدہ کا نیا انکشاف

بالی وڈ اداکارہ جیا خان جنہوں نے سال 2013 میں خود کشی کرکے موت کو گلے لگا لیا تھا ان کی والدہ رابعہ خان نے انکشاف کیا ہے آدیتیہ پنچولی کے بیٹے سورج پنچولی نے ممبئی کی عدالت میں آنجہانی اداکارہ کو زبانی اور جسمانی طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا۔سورج پنچولی ایک بار پھر سے سرخیوں میں آگئے ہیں کیونکہ جیا خان کی والدہ نے عدالت کو بتایا ہے کہ ان کی بیٹی جسمانی اور ذہنی استحصال کی وجہ سے اداکار سورج پنچولی کے ساتھ اپنا رشتہ ختم کرنا چاہتی تھی۔ عدالت کی سماعت کے دوران رابعہ نے سورج کا ذکر کیا اور اس پر خودکشی کے لیے اکسانے کا الزام لگایا۔ جیا کی والدہ کے مطابق اداکارہ نے انہیں 2012 میں سورج کے ساتھ اپنے تعلقات کے بارے میں بتایا تھا۔انڈیا ٹوڈے کی رپورٹس کے مطابق رابعہ خان نے ان تمام چیزوں

کے بارے میں مزید تفصیل سے بتایا جو جیا خان انہیں سورج پنچولی کے بارے میں بتاتی تھیں۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ انہیں اکتوبر 2012 میں پتہ چلا کہ یہ دونوں ایک دوسرے کے گھر میں رہ رہے ہیں۔جیا بہت خوش تھی لیکن بعد میں سورج نے اس پر تشدد کرنا شروع کر دیا گالیاں دینی شروع کر دیں میری بیٹی نے اس ھوالے سے مجھے دسمبر 2012 میں بتایا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جیا نے سورج کو معاف کر دیا تھا لیکن وہ میری بیٹی کو مسلسل ٹارچر کرتا رہا اسکو دھوکہ دیتا رہا۔ میری بیٹی نے بتایا سورج اسے گندے ناموں سے بلاتا تھا اور ایک بار تو کار سے ہی باہر نکال کر پھینک دیا تھا۔عدالت نے رابعہ خان سے مزید بیان لینے کا فیصلہ کرتے ہوئے سورج پنچولی کے وکیل کو ہدایات دیں۔