سپلیمنٹس اور وٹامنز کا استعمال ضروری یا غیر ضروری

جوں جوں زمانہ رفتار پکڑ رہا ہے لوگ ہر چیز کا شارٹ کٹ ڈھونڈنے لگے ہیں سائنس اور ٹیکنالوجی نے ایسے طریقے ایجاد کر لئے ہیں جو گھنٹوں کاکام منٹوں اور مہینوں کا کام دنوں میں ہو جاتا ہے موجودہ دور میں بے حد مصروفیت کی وجہ سے لوگ صحت اور خوراک ہر توجہ دینے کے لئے وقت نییں نکال پاتے اسی لئے اپنی جسمانی ضروریات پوری کرنے کے لئے صحت بخش غذا کی بجائے مختلف سپلیمنٹس اور ؤٹامنز کا استعمال کر رہے ہیں گزشتہ کئی برسوں سے سپلیمنٹس اور وٹامنز کے استعمال کا رحجان بڑھ رہا ہے اسی لئے یہ سپلیمنٹس کی گولیاں اور ٹانک ہمارے لئے فوری توانائی اور جسمانی ساخت بیتر طور پر برقرار رکھنے میں مدد دیتے ہیں امریکہ کی اکیڈمی آف نیوٹریشن اینڈ ڈائٹیٹکس کے مطابق یہ بالکل ممکن ہے کہ سپلیمنٹس کا ضرورت سے زیادہ استعمال انسانی صحت کے لئے خطرے کا باعث بن سکتا ہے بلاشبہ ان سپلیمنٹس کے اپنے فوائد بھی موجود ہیں اس کے لئے ضروری ہے کہ انھیں تجویز کردہ مقررہ مقدار کے مطابق ہی استعمال کیا جائے مثال کے طور پر اگرچہ کیلشئم ہڈیوں اور دانتوں کی نشونما اور صحت برقرار رکھنے کے لئے بے حد ضروری ہے لیکن تحقیق کے مطابق خون میں کیلشیم کی ضرورت سے زائد موجودگی شریانوں میں پلاک کے بننے کا سبب بنتا ہے جو سٹروکس اور ہارٹ اٹیک کے خطرے میں اضافے کا باعث بنتا ہے اسی لئے سپلیمنٹس کا استعمال اور مقدار کسی رجسٹرڈ اور ماہر صحت
کے مشورے کے مطابق ہی کیا جائے اگر آپ نے کسی نئے سپیلمنٹ کا استعمال شروع کیا ہے تو ممکن ہے آپ کی صحت کئی مسائل سے دوچار ہو جس کا مطلب ہے کہ آپ سپلیمنٹس کا استعمال ضرورت سے زیادہ کر رہی ہیں یہ بھی ممکن ہے کہ آپ معدے کی خرابی تیزابیت متلی قے دورے پڑنے اور اختلاج قلب جیسی کیفیات سے دو چار ہوں تو اس کے لئے بہتر ہے کہ آپ جیسے ہی ان میں سے کسی علامت کو محسوس کریں تو فوراً سپلیمنٹس کا استعمال ترک کر دیں اور فوری ڈاکٹر کو اپنی یہ کیفیات بتائیں سپلیمنٹس غذائی ضروریات کو پورا کرنے
کے لئے بہتر ہوسکتے ہیں لیکن غذائی کمی کو پورا کرنے کے لئے اس سے زیادہ موثر طریقہ ورزش اور روزمرہ خوراک میں توازن کے ساتھ صحت بخش اشیاء کا اضافہ کرتا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.