fbpx

سپریم کورٹ نے اہم شخصیت کے بیٹے کو سرنڈر کرنے کا حکم دے دیا

سپریم کورٹ نے اہم شخصیت کے بیٹے کو سرنڈر کرنے کا حکم دے دیا
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ میں آمد ن سے زائد اثاثہ جات کیس کی سماعت ہوئی

خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ نے ضمانت قبل از گرفتار کی درخواست واپس لے لی عدالت نے فرخ شاہ کو 3دن میں احتساب عدالت کے سامنے سرنڈر کرنے کا حکم دے دیا سپریم کورٹ کے جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی،وکیل نے عدالت میں کہا کہ نیب کی تحقیقات مکمل ،فرخ شاہ کو گرفتار کرنے کی کیا ضرورت ہے؟ جائیداد رکھنا کوئی جرم نہیں، نیب وکیل نے کہا کہ فرخ شاہ نے تحقیقات میں تعاون نہیں کیا،جسٹس سردار طارق مسعود نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ طلعت اسحاق کیس میں ضمانت کے پیرامیٹرز طے ہو چکے، عدالت طلعت اسحاق کیس کے پیرامیٹرز سے باہر نہیں جا سکتی،نیب نے ضمنی ریفرنس دائر کرنا ہے، درخوست ضمانت پر فیصلہ کر دیں یادرخواست واپس لینا چاہتے ہیں؟

وکیل فاروق ایچ نائیک نے عدالت میں کہا کہ میں درخواست ضمانت واپس لے لیتا ہوں،فرخ شاہ کو سرنڈر کرنے کیلئے 3دن کی مہلت دے دیں،

قیادت کمزور ہونے کی وجہ سے بھارت آئے روز پاکستان پر حملے کر رہا ہے،خورشید شاہ

گرفتاری کے بعد بیماری سیاسی رہنماؤں کا معمول،خورشید شاہ بھی

خورشید شاہ کی گرفتاری، دونوں بیگمات نے بڑا قدم اٹھا لیا، عدالت پہنچ گئیں

خورشید شاہ سمیت 18 افراد کےخلاف ایک ارب 23 کروڑ کا ریفرنس دائر ہے ،خورشید شاہ کے علاوہ نیب ریفرنس میں ان کے اہلخانہ سمیت 17افراد شامل ہیں ،

واضح رہے کہ  سندھ ہائیکورٹ سکھر بنچ نے پیپلز پارٹی کے رہنما ،رکن قومی اسمبلی خورشید شاہ اور ان کے بیٹے ایم پی اے فرخ شاہ کی درخواست ضمانت مسترد کر دی تھی خورشید شاہ اور ان کے 18 ساتھیوں پر نیب عدالت میں ایک ارب 23 کروڑ روپے سے زائد آمدن کے اثاثے بنانے کے الزام میں ریفرنس زیر سماعت ہے

نیب نے خورشید شاہ کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کر رکھا ہے، خورشیدشاہ کیخلاف ریفرنس میں مزید 17 افرادبھی نامزدہیں، خورشیدشاہ کی اہلیہ،دونوں بیٹےاورداماد بھی عدالت پیش ہوئے ہیں، اویس قادر شاہ،ایم پی اے فرخ شاہ ودیگراحتساب عدالت پیش ہوئے ہیں. سکھر:ملزمان پرایک ارب 23 کروڑ روپے کرپشن کاالزام ہے