fbpx

تونسہ : خاتون اور بچہ قتل کیس ،پولیس نے بھاری رشوت لیکر ،ملزمان بیگناہ کردئے،ورثاء کا احتجاج

تونسہ شریف، باغی ٹی وی( نامہ نگار عمران لنڈ)خاتون اور بچہ قتل کیس ،پولیس نے بھاری رشوت لیکر ،ملزمان بیگناہ کردئے،ورثاء کا احتجاج
تفصیل کے مطابق بستی مالہا کے رہائشی اللہ بخش قیصرانی، عبدالغفور قیصرانی نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ایس ایچ او تھانہ ریتڑہ اور تفتیشی افسر نے دوہرے قتل میں ملوث ملزمان سے بھاری رشوت لے کر بے گناہ کر دیا ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ دنوں تھانہ ریتڑہ میں انکوائری ہوئی جس میں تقریباً 250افراد موجود تھے مگر ایس ایچ او تھانہ ریتڑہ نے صرف 25افراد کے نام لکھ دیئے اس بات سے ظاہر ہوتا ہے کہ موصوف اسی وقت سے کیس خراب کرنے پر تلے ہوئے تھے رقیہ بی بی مقتولہ کے والد اللہ بخش کا کہنا تھا کہ وقوعہ کے روز جس وقت میرے نواسے معصوم پھول راول اور میری بیٹی پر تشدد کیا گیا اور قتل کیا گیا محمد عارف سمیت چاروں ملزمان موقع پر موجود تھے مگر ناقص تفتیش اور بھاری رشوت لے کر تین ملزمان کو بے گناہ کر دیا گیا انہوں نے ڈی پی او ڈیرہ غازی خان سے استدعا کرتے ہوئے کہا کہ شفاف انکوائری کرائی جائے اور ہمیں انصاف فراہم کیا جائے جب اس سلسلہ میں ایس ایچ او تھانہ ریتڑہ اور تفتیشی امان اللہ سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا تفتیش میرٹ پر کی گئی ہے رشوت لینے کا الزام بے بنیاد ہے میرٹ پر تفتیش کی جارہی ہے جو بھی جتنا ملوث پایا گیا قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی