fbpx

بجلی کے بل میں فیول ایڈجسٹمنٹ، ٹیکس کی مد میں بھاری چارجز،سماعت ملتوی

بجلی کے بل میں فیول ایڈجسٹمنٹ اور ٹیکس کی مد میں بھاری چارجز کی وصولی ،کے الیکٹرک کے خلاف حافظ نعیم کی درخواست پر سندھ ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی

حافظ نعیم الرحمان اپنے وکیل ایڈوکیٹ عثمان فاروق کے ہمراہ پیش ہوئے، وکیل جماعت اسلامی نے عدالت میں کہا کہ کے الیکٹرک نے کئی سو صفحات کا جواب دیا ہے، جائزہ لینے کا موقع دیا جائے ، حافظ نعیم نے فیول ایڈجسٹمنٹ پر حکم امتناع جاری کرنے کی درخواست کی، عدالت نے تمام فریقین کو آئندہ سماعت پر تیاری کرکے آنے کی ہدایت کردی،عدالت نے کے الیکٹرک اور نیپرا کا جواب دیگر فریقین کو بھی فراہم کرنے کی ہدایت کی، عدالت نے کیس کی سماعت 18 اکتوبر تک ملتوی کر دی،

سندھ ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں کہا گیا تھا کہ کے الیکٹرک کو اوور بلنگ، فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز وصولی سے روکا جائے، سیلز ٹیکس، انکم ٹیکس، ٹی وی لائسنس فیس دیگر چارجز وصول کرنے سے بھی روکا جائے کے الیکٹرک کے اکاونٹس کا فرانزک آڈٹ کرایا جائے،کے الیکٹرک کو غیر قانونی بالخصوص رات کے اوقات بجلی کی بندش سے روکا جائے،وفاق سے معاہدے کے مطابق کے الیکٹرک کو اپنی بجلی پیدا کرنے کا حکم دیا جائے، بجلی کی پیداوار اور استعداد بڑھانے کے لیے اقدامات کا حکم دیا جائے،

حکومت بارش سے متاثرہ افراد کو معاوضہ دینے کا اعلان کرے،سربراہ پاکستان سنی تحریک

بارش کے بعد کی صورتحال ، میئر کراچی نے گورنر سندھ سے ملاقات میں وفاق سے مدد مانگ لی

اکثر ارکان اسمبلی ڈیفنس اور کلفٹن کے رہائشی ہیں انہیں پتا ہی نہیں کہ کراچی کے عوام کے مسائل کیا ہیں،حافظ نعیم الرحمان

سیاسی ایڈمنسٹریٹر نے کراچی کو ڈبو دیا،جماعت اسلامی