fbpx

وزیرآباد واقعے کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی کی تشکیل کا فیصلہ

وزیرآباد واقعے کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی کی تشکیل کا فیصلہ

صوبائی وزیر پارلیمانی امور، تحفظ ماحول و کوآپریٹوز محمد بشارت راجہ کی زیر صدارت پنجاب کابینہ کی سٹینڈنگ کمیٹی لا اینڈ آرڈر (ایس سی سی ایل او) کے اجلاس میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان پر وزیر آباد کے قریب حملے کی تحقیقات کیلئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم (جے آئی ٹی)کی تشکیل کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کابینہ کمیٹی کا اجلاس سول سیکرٹریٹ میں ہوا۔ چیئرمین کمیٹی محمد بشارت راجہ نے بذریعہ ویڈیو لنک راولپنڈی سے صدارت کی۔ مشیر وزیراعلیٰ برائے داخلہ عمر سرفراز چیمہ، چیف سیکرٹری عبداللہ خان سنبل اور دیگر افسروں نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں پی ٹی آئی کے لانگ مارچ کے (جمعرات) سے شروع ہونے والے اگلے مرحلے کی سکیورٹی کے انتظامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ ڈی آئی جی آپریشنز پنجاب نے بریفنگ دی۔ اجلاس نے فیصلہ کیا کہ ایڈیشنل انسپکٹر جنرل ہائی وے پٹرول پنجاب ریاض نذیر گاڑا جے آئی ٹی کی قیادت کریں گے جبکہ جے آئی ٹی کے دیگر ارکان میں متعلقہ ایجنسیوں کے نمائندے شامل ہوں گے۔

کابینہ کمیٹی نے یہ فیصلہ بھی کیا کہ لانگ مارچ کے کنٹینر پر موجود پی ٹی آئی کے سنیئر رہنماؤں کو وہی سکیورٹی دی جائے گی جو عمران خان کیلئے مخصوص ہے۔ چیئرمین کمیٹی محمد بشارت راجہ نے ہدایت کی کہ مستقبل میں کسی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے لئے متعلقہ ضلع کی پولیس اور ضلعی انتظامیہ پی ٹی آئی کی مقامی قیادت سے رابطہ رکھیں۔ کنٹینر کے قریب گاڑیوں کی غیر ضروری موجودگی کو روکا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر آباد واقعے کے تناظر میں لانگ مارچ کے کنٹینر پر بلٹ پروف روسٹرم اور گلاس لازمی نصب کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ روٹ کے قریب واقع عمارتوں پر سنائپرز کی تعیناتی اور دیگر سکیورٹی انتظامات میں کوتاہی نہیں ہونی چاہیے۔ کمیٹی نے راولپنڈی سمیت دیگر علاقوں کی صورتحال کا جائزہ لیتے ہوئے فیصلہ کیا کہ موٹرویز کی راہ میں رکاوٹوں کو جلد دور کیا جائے گا بالخصوص معزز جج صاحبان کی گاڑیوں کو لازمی طور پر راستہ دینے کیلئے پی ٹی آئی قیادت سے بات کی جائے گی

شوکت خانم میں عمران خان کا علاج جاری ہے،میڈیکل رپورٹس تسلی بخش قرار دے دی 

شوکت خانم کے باہر سے مشکوک شخص گرفتار

جس کو پنجاب کا سب سے بڑا ڈاکو کہتا تھا اسے ڈاکو کی وزارت اعلیٰ کے نیچے عمران خان پر حملہ ہوا

پاکستان کو ایک مرتبہ پھر انتہا پسندی اور مذہبی جنونیت کا سامنا 

تحریک انصاف کا احتجاج، راستے بند، شہریوں کی زندگی اجیرن

ویڈیو:عمران خان پر حملہ کرنیوالا ملزم گرفتار،عمران خان کیسے آئے باہر؟

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی کی زیر صدارت وزیر اعلی آفس میں اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں لانگ مارچ قافلے کے ٹوبہ ٹیک سنگھ والے روٹ کے سکیورٹی انتظامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا-وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی نے لانگ مارچ کے ٹوبہ ٹیک سنگھ والے روٹ پرسکیورٹی انتظامات کے حوالے سے پولیس حکام اور انتظامی افسران کو ہدایات دیں -اسد عمر ٹوبہ ٹیک سنگھ سے لانگ مارچ کے قافلے کو لیڈ کریں گے-لانگ مارچ کا قافلہ ٹوبہ ٹیک سنگھ، جھنگ، فیصل آباد، جڑانوالہ، چنیوٹ اور دیگر شہروں سے ہوتا ہوا راولپنڈی پہنچے گا جبکہ وزیر آباد سے شروع ہونے والا لانگ ما رچ اپنے مقرر کردہ روٹ سے ہوتا ہوا راولپنڈی پہنچے گا-چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان ویڈیو لنک کے ذریعے لانگ مارچ کے شرکاء سے خطاب کریں گے-

وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی نے پورے روٹ پر سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کی ہدایت دی اور کہا کہ ٹوبہ ٹیک سنگھ والے روٹ کے لانگ مارچ کے شرکاء کو بھی بہترین سکیورٹی فراہم کریں گے۔ڈرون اور سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے لانگ مارچ اور روٹ کی نگرانی کی جائے گی۔روٹ کے راستے میں عمارتوں کی چھتوں پر پولیس کمانڈوز تعینات کئے جائیں گے۔لانگ مارچ کے پورے روٹ پرامن عامہ برقراررکھنے کیلئے خصوصی انتظامات کیے جائیں گے۔وضع کردہ سکیورٹی پلان پر من وعن عملدرآمد یقینی بنایاجائے گا۔ وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی نے ڈیوٹی پر مامور اہلکاروں کے لئے کھانے کے بہترین انتظامات کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ پولیس کنٹرول روم24گھنٹے کام کرے گا۔روٹ کے ہر ضلع میں پی ٹی آئی کی قیادت سے مشاورت کیلئے فوکل پرسن تعینات کر دیئے گئے ہیں۔لانگ مارچ میں شریک سیاسی رہنماؤں اور شرکاء کو ہائی لیول سکیورٹی فراہم کریں گے۔

وزیر اعلی نے ہدایت کی کہ کنٹینر پربلٹ پروف روسٹرم اوربلٹ پروف شیلڈز کا استعمال یقینی بنایا جائے۔لانگ مارچ کے شرکاء پہلے بھی پرامن رہے اور اب بھی پرامن رہیں گے۔پولیس اورانتظامیہ عوام کے جان و مال کے تحفظ کیلئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھے۔چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ تمام متعلقہ ادارے بہترین کوآرڈینیشن کے تحت امن وامان کی صورتحال کو یقینی بنائیں اورٹریفک رواں دواں رکھنے کیلئے متبادل انتظامات کیے جائیں۔کو آرڈینیشن کمیٹی روزانہ کی بنیاد پر میٹنگ کرے اورصورتحال کے تناظرمیں اقدامات کیے جائیں۔

وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی کو ٹوبہ ٹیک سنگھ اور دیگر شہروں میں لانگ مارچ میں شریک قیادت اور شرکاء کے سکیورٹی انتظامات کے بارے میں بریفنگ دی گئی-پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما اسد عمر، صوبائی وزیر ڈاکٹر یاسمین راشد، عمر ایوب،صوبائی مشیر داخلہ عمر سرفراز چیمہ، شوکت بھٹی، چیف سیکرٹری عبداللہ خان سنبل،ا یڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ کیپٹن (ر) اسداللہ خان، پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ محمد خان بھٹی، ایڈیشنل آئی جی آپریشنز پنجاب، ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی، ایڈیشنل آئی جی سپیشل برانچ،سی سی پی او لاہور، ڈی آئی جی آپریشنز پنجاب، سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن، ڈی جی ریسکیو 1122، کمشنر فیصل آباد ڈویژن، کمشنر سرگودھا ڈویژن، آر پی او فیصل آباد، آر پی او سرگودھا، چنیوٹ، سرگودھا، فیصل آباد، ٹوبہ ٹیک سنگھ اور جھنگ کے ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوزنے اجلاس میں شرکت کی-ڈپٹی کمشنر و ڈی پی او چکوال ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے-