fbpx

دال میں کچھ کالا ضرور:افغان حکومت نے پاکستان میں افغانی سفیرکوشامل تفتیش ہونے کے ڈر سے واپس بلالیا:

کابل :دال میں کچھ کالا ضرور:افغان حکومت نے پاکستان میں افغانی سفیرکوشامل تفتیش ہونے کے ڈر سے واپس بلالیا:،اطلاعات کے مطابق افغان حکومت نے پاکستان میں تعینات اپنے سفیر نجیب اللہ علی خیل سمیت سفارتی عملے کو واپس بلالیا۔

افغان وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اسلام آباد میں افغان سفیر اور دیگر سفارتی عملے کو کابل واپس بلالیا ہے۔افغان وزارت خارجہ کے مطابق افغان صدر نےاسلام آبادسے افغان سفیراور سفارتی عملے کو واپس بلایا جبکہ افغان سفیراورسفارتی عملےکوسیکیورٹی کے معاملے پر واپس بلایاگیا۔

افغان وزارت خارجہ نے بتایا کہ افغانستان کاوفدپاکستان کا دورہ کر کے صورتحال پر تبادلہ خیال کرے گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا اور تشدد کا معاملہ سامنے آیا تھا۔

ذرائع کے مطابق حکام 16جولائی کو افغان سفیر کی بیٹی کے ساتھ پیش آئے واقعے کی تحقیقات کررہے ہیں جبکہ اس معاملے پر وزیراعظم عمران خان نے وزیر داخلہ شیخ رشید کو 48 گھنٹوں میں ملزمان کو گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا۔

افغان وزارت خارجہ نے بیان میں پاکستان سے سفارتی عملے کو تحفظ دینےکا مطالبہ کیا تھا اور بیان میں یہ بھی کہا تھا کہ افغان سفیر کی بیٹی کو اغوا اور تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

 

 

دوسری طرف نائب افغان صدر امراللہ صالح نے افغانی سفیر کی واپسی کی اطلاع کرتےہوئے ساتھ الزامات بھی لگادیئے اورکہا ہےکہ افغانی سفیر کے ساتھ جو سلوک ہوا ہے اس پرافغان حکومت نے اپنے سفیر کوواپس بلانے کا فیصلہ کیا ہے

دوسری طرف وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ افغان سفیر کی بیٹی کو اغوا نہیں کیا گیا بلکہ یہ عالمی سازش ہے اور بھارتی خفیہ ایجنسی را کا ایجنڈا ہے۔