fbpx

امریکی ادارے یوایس ایڈ کےایڈمنسٹریٹر کی آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سےملاقات

راولپنڈی:امریکی ادارے یوایس ایڈ کے سربراہ کاآرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سےملاقات ،اطلاعات کے مطابق امریکی ادارے یوایس ایڈ کی سربراہ مس سمانتھا پاور، جو کہ یو ایس ایڈ کی ایڈمنسٹریٹر بھی ہیں آج جی ایچ کیو میں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سے یوایس ایڈ کی ایڈمنسٹریٹر مس سمانتھا پاور کی ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی کے امور اور انسانی ہمدردی کے اس نازک موقع پر امریکی امداد کی فراہمی اور بحالی پر اتفاق کیا۔

یوایس ایڈ کی ایڈمنسٹریٹر نے پاکستان میں جاری سیلاب سے ہونے والی تباہی پر دکھ کا اظہار کیا اور متاثرین کے اہل خانہ سے دلی تعزیت کی۔ انہوں نے پاکستانی عوام کو مکمل تعاون کی پیشکش کی۔ انہوں نے حالیہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں بچاؤ اور امدادی سرگرمیوں میں سول انتظامیہ اور سیلاب سے متاثرہ آبادی کی مدد کے لیے پاک فوج کی کوششوں کو بھی سراہا۔

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے امریکہ کی حمایت کا شکریہ ادا کیا اور اس بات کا اعادہ کیا کہ ہمارے عالمی شراکت داروں کی مدد متاثرین کی بازیابی/ بحالی میں اہم ہوگی۔
امریکا نے پاکستان میں آنے والے بدترین سیلاب کے دوران مزید دو کروڑ ڈالر امداد دینے کا اعلان کر دیا۔

 

 

 

یاد رہے کہ امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی (یو ایس ایڈ) کی ایڈمنسٹریٹر سمانتھا پاور نے اعلان کیا ہے کہ امریکا یو ایس ایڈ کے ذریعے پاکستان میں مون سون بارشوں کے نتیجے میں آنے والے شدید سیلاب سے متاثرہ لوگوں کی مدد کے لیے دو کروڑ ڈالر (تقریباً پانچ ارب روپے) کی اضافی امداد فراہم کر رہا ہے۔

اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سیلابوں کے اثرات پورے پاکستان میں بڑے پیمانے پر محسوس کیے گئے ہیں۔ سیلاب سے ساڑھے تین کروڑ پاکستانی متاثر ہوئے ہیں اور تقریباً ایک ہزار 400 سے زائد اموات ہو چکی ہیں جبکہ 12,700 سے زیادہ لوگ زخمی ہوئے ہیں۔

سمانتھا پاور نے کہا کہ انفراسٹرکچر تباہ ہو گیا ہے، جس میں 17 لاکھ سے زیادہ مکانات، ایک کروڑ 38 لاکھ ایکڑ زرعی اراضی، ہزاروں میل سڑکیں اور سینکڑوں پل تباہ ہو گئے ہیں۔ یہ امداد اس سے قبل اعلان کردہ تین کروڑ ڈالر کی گذشتہ ہفتے کی گئی امداد کے علاوہ ہے۔

یو ایس ایڈ کے بیان کے مطابق 12 اگست کے بعد سے امریکہا نے پاکستان کے لوگوں کی مدد کے لیے پانچ کروڑ ڈالر سے زیادہ کی آفات سے متعلق امداد فراہم کی ہے۔ ان اضافی فنڈز کے ساتھ، یو ایس ایڈ کے شراکت دار ہنگامی امدادی سامان، نقد امداد ،پناہ گاہوں، ذریعہ معاش، لاجسٹکس اور انسانی ہمدردی کی بنیاد پر رسپانس کوآرڈینیشن سسٹم کی فراہمی جاری رکھیں گے۔ یو ایس ایڈ پانی، صفائی ستھرائی اور حفظان صحت کی امداد کو پانی سے پیدا ہونے والی بیماریوں کے متوقع پھیلاؤ کو کم کرنے کے لیے احتیاطی اقدام کے طور پر بھی ترجیح دے گا۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر کی ملاقات

سیلابی پانی کے بعد لوگ مشکلات کا شکار ہیں کھلے آسمان تلے مکین رہ رہے ہیں

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کانجو اور سوات کا دورہ کیا

وزیراعظم شہباز شریف نے چارسدہ میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا

پاک فضائیہ کی خیبر پختونخوا، سندھ، بلوچستان اور جنوبی پنجاب کے سیلاب سے شدید متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں۔