fbpx

جواہرلال نہرو یونیورسٹی میں کشمیر کے موضوع پرویبنار بھارتی سرکارنےزبردستی منسوخ کروادیا

نئی دہلی: جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں کشمیر کے موضوع پرویبنار بھارتی سرکارنےزبردستی منسوخ کروادیا ،اطلاعات کے مطابق بھارتی دارلحکومت نئی دلی کی معروف جواہر لال نہرو یونیورسٹی( جے این یو ) میں ہونے والا کشمیر کے متعلق ویبینار زبردستی منسوخ کروادیاگیا۔

کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ویبنار سنٹر فار ویمن اسٹڈیز کی طرف سے منعقد کیا جا رہا تھا جس پر کیمپس میں احتجاج شروع ہوگیا۔ احتجاج کے فوراً بعد یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا جس میں کہا گیا کہ سینٹر فار ویمن اسٹڈیز کے زیر اہتمام پروگرام منسوخ کر دیا گیا ہے۔

خبر رساں ادارے ساوتھ ایشین وائر کی ایک خبر میں کہا گیا کہ جے این یو کے وائس چانسلر پروفیسر ایم جگدیش کمار نے کہا کہ سنٹر فار ویمن اسٹڈیز کی جانب سے رات ساڑھے آٹھ بجے ‘جینڈر ریزسٹنس اینڈ فریش چیلنجز ان پوسٹ 2019 کشمیر’ کے عنوان سے ایک ویبینار کا انعقاد کیا جا رہا تھا

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جیسے ہی اس پروگرام کی اطلاع ملی تو منتظمین کو پروگرام کو فوری طور پر منسوخ کرنے کی ہدایت کی گئی کیونکہ یونیورسٹی انتظامیہ سے اسکے انعقاد کی اجازت نہیں لی گئی تھی ۔جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے کارکنوں نے پروگرام کے انعقاد کے خلاف احتجاج کیا اور ہنگامہ آرائی کی۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!