fbpx

کے پی حکومت نے پروٹوکول واپس لینے کا طریقہ بتادیا

پشاور:کے پی حکومت نے پروٹوکول واپس لینے کا طریقہ بتادیا،اطلاعات کے مطابق صوبہ خیبرپختونخواہ کی حکومت نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے نوپروٹوکول کے فیصلے میں تاویلیں پیدا کرنا شروع کردی ہیں‌ اورپروٹوکول ہٹانے کےبعد اب پروٹوکول واپس لینے کا گُر بھی بتادیا ہے ،

اس حوالے سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ اس سلسلے میں پیغام بھیج دیا گیا ہے ،

ادھر صوبے بھر میں سیکڑوں افراد کو پولیس کی سیکورٹی فراہم کی گئی تھی۔ ان میں سے کچھ لوگوں کو یہ سیکورٹی باقاعدہ محکمہ داخلہ کے اجازت نامے کے تحت فراہم کی گئی تھی جبکہ کافی افراد نے اپنا اثر رسوخ استعمال کرکے یہ سیکورٹی حاصل کی تھی۔ اور ان کو نمود و نمائش کے لئیے استعمال کیا جارہا تھا۔

ایک حکم نامے کے تحت یہ سیکورٹی واپس لے لی گئی ہے جس کا مقصد کسی سیاسی وابستگی سے بالا تر ہو کر سیکورٹی کے اس انتظام کو باضابطہ بنانا ہے۔

حکومت کی طرف سے کہا گیا ہے کہ اگر کوئی اہم شخص اس پولیس کے حکم نامے سے متاثر ہوا ہے اور سمجھتا ہے کہ اسکی جان کو انتہائ خطرات لاحق ہیں تو وہ محکمہ داخلہ حکومت خیبر پختونخواہ سے رابطہ کرسکتا ہے جہاں موجود صوبائ تھریٹ اسیسمینٹ کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں اسکو باقاعدہ آرڈر کے تحت سیکورٹی فراہم کردی جاۓ گی۔