fbpx

موٹر سائیکل رکشوں کے شور، دھوئیں اور فحش گانوں سے شہریوں کی زندگیاں اجیرن ہوگئی

موٹر سائیکل رکشوں کے شور، دھویں اور فحاش گانوں سے شہریوں کی زندگیاں اجیرن بن گئیں.ٹریفک پولیس،محکمہ ماحولیات ودیگر متعلقہ ادارے کاروائی کرنے سے گریزاں نظر آتے ہیں،اعلیٰ افسران سے نوٹس کا مطالبہ
باغی ٹی وی:شیخوپورہ (محمد طلال سے) چنگ چی رکشوں،آٹو رکشوں لوڈر رکشوں کے شورودھویں، اورفحاش قسم کے گانوں سے شہری انتہائی پریشان ہوگئے،کم عمر چنگ چی رکشہ ڈرائیورز بغیرروٹ پرمٹ اور بغیر لائسنس کے خطرناک طریقے سے رکشے چلاتے نظر آتے ہیں اور حادثات کے باعث انسانی زندگیوں کا ضیاع ہو رہا ہے۔شہر کے اندرونی علاقوں لاری اڈا،مین بازار ، ڈاکٹر رفیق انجم چوک، پر ہمہ وقت درجنوں موٹرسائیکلیں، چنگ چی رکشے کے اڈے نظر آتے ہیں۔سڑکوں کے کناروں پر جگہ جگہ چنگ چی رکشے کھڑے کرکے ٹریفک کے بہاؤ میں مسائل پیدا کئے جارہے ہیں، بازار میں خریداری کے لیے آنے والی خواتین کو بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے، رکشوں کے شور و دھوئیں سے شہری بہرے پن ،دمے ،ٹی بی کے مرض اور آنکھوں کی بیماریوں کا شکار ہو رہے ہیں،ٹریفک پولیس رکشہ ڈرائیوروں کیخلاف کارروائیاں کرنے کی بجائے ان سے معاملات طے کرکے ان کو تحفظ فراہم کرتے ہیں۔شہریوں نے انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب، آر پی او شیخوپورہ ڈی پی او شیخوپورہ ،ڈی ایس پی ٹریفک پولیس،ڈی سی شیخوپورہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع بھر میں چلنے والے غیر قانونی رکشوں کیخلاف کریک ڈاؤن کیا جائے جبکہ غفلت کے مرتکب ٹریفک پولیس کے افسران و اہلکاروں کیخلاف سخت محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے تاکہ شہر میں نافذ جنگل کے قانون کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔