fbpx

پاکستان کےمسائل کا حل صرف اورصرف صدارتی نظام:چیف جسٹس آف پاکستان نے بینچ تشکیل دے دیا

اسلام آباد :پاکستان کےمسائل کا حل صرف اورصرف صدارتی نظام:چیف جسٹس آف پاکستان نے بینچ تشکیل دے دیا ،اطلاعات کے مطابق پاکستان میں پارلیمانی نظام کے فیل ہونے اوراس کے نتیجے میں پیدا ہونے والے مسائل کےخلاف سخت ردعمل آناشروع ہوگیا ہے اور اس نظام سے جان چھڑانے کے لیے سپریم کورٹ آف پاکستان میں ایک درخواست دائر ہوگئی ہے

پاکستان میں پارلیمانی نظام سے جان چھڑانے اورصدارتی نظام کے نفاذ کے حوالے سے قصور کی ایک اہم شخصیت کی درخواست پر چیف جسٹس پاکستان نے صدارتی نظام کے نفاذ سے متعلق کیس کیلئے بینچ تشکیل دے دیا

چیف جسٹس آف پاکستان گلزار احمد نے ملک بھر میں صدارتی نظام کے نفاذسے متعلق کیس کیلئے بینچ تشکیل دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں تین رکنی بینچ 27 ستمبر کو سماعت کرے گا۔ذرائع کے مطابق جسٹس منصور علی شاہ اور جسٹس منیب اختر بھی بینچ میں شامل ہیں۔

واضح رہے کہ احمد رضا قصوری سمیت چار افراد نے صدارتی نظام کے نفاذ سے متعلق درخواستیں دائر کر رکھی ہیں۔

ادھرذرائع کے مطابق عوام توصدارتی نظام کے حق میں ہیں لیکن چند سیاسی جماعتیں جن کے قائدین کوصدارتی نظام کی صورت میں اپنے کنٹرول اوراپنی سیاست کے ختم ہونے کا ڈر ہے وہ اس کی مخالفت کررہے ہیں‌