fbpx

وزیراعظم سعودی عرب پہنچ گئے گورنرمدینہ نے استقبال کیا

اسلام آباد:وزیراعظم سعودی عرب پہنچ گئے گورنرمدینہ نے استقبال کیا،اطلاعات کے مطابق وزیر اعظم شہباز شریف کی 3 روزہ دورے پر سعودی عرب پہنچ گئے ہیں جہاں مدینہ کے گورنرفیصل بن سلمان بن عبدالعزیز نے ان کا استقبال کیا

پاکستان کو 6 سے 8 ارب ڈالر کا ریلیف پیکج ملنے کا امکان ہے، ادھار تیل بھی ملے گا، کورونا کے دوران ملازمتوں سے فارغ ہونے والے پاکستانیوں کی بحالی بھی متوقع ہے۔

دورہ سعودی عرب پر وفاقی وزراء، بلاول بھٹو زرداری، مفتاح اسماعیل، نوابزادہ شاہ زین بگٹی، مریم اورنگزیب، خواجہ آصف، چودھری سالک حسین، ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی اور محسن داوڑ بھی ہمراہ ہیں۔

سعودی عرب روانگی سے قبل بات کرتے ہوئے شہباز شریف سے اپنے پیغام میں کہا کہ خوشی ہے وزیراعظم کا منصب سنبھالنے کے بعد اپنا پہلا دورہ سعودی عرب کا کر رہا ہوں، دونوں ملکوں کے تعلقات کی بنیادیں باہمی تعاون اور اعتماد پر مبنی ہیں، پاکستان سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے، دورے سے دوطرفہ تذویراتی تعاون کو مزید فروغ ملے گا۔

شہباز شریف نے مسلسل تعاون پر سعودی حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب نے پاکستان کی اقتصادی ترقی میں ہمیشہ اہم کردار ادا کیا، سعود ی عرب کے ساتھ تعلقات انتہائی اہمیت کے حامل ہیں، برادر ملک نے پاکستان کی ترقی میں اہم کردار اد اکیا، حالیہ دورے سے دونوں ملکوں کے درمیان دوستی کے مثالی دور کا آغاز ہوگا۔

ادھر وزارت خزانہ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم شہباز شریف کے دورہ میں پاکستان کو 6 سے 8 ارب ڈالر کا ریلیف پیکج آسان شرائط پر مل سکتا ہے، پیکج کے تحت زرمبادلہ کے ذخائر بہتر بنانے کے لیے انتہائی شرح سود پر 3 ارب ڈالرمل سکتے ہیں۔ ادھار تیل، ایل این جی اور یوریا کھاد کی سہولت بھی میسر ہوسکتی سعودی عرب کی گارنٹی پر سعودی بینکوں سے سستے قرضوں کی فراہمی ممکن ہو سکے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستانیوں کے لیے روزگار کے مواقع بڑھانے کے ساتھ ساتھ کورونا کے دوران بے روزگار ہونے والے پاکستانیوں کی نوکری بحالی کے امور پر بھی بات ہوسکتی ہے، پاکستان میں سعودی سرمایہ کاری بڑھانے، پاکستانی مصنوعات کی برآمدات بڑھانے پر بھی تبادلہ خیال ہوگا۔