fbpx

اہل لاہورسےکیےگئےوعدوں پرکس حدتک عمل ہوا؟وزیراعظم نےعثمان بزدارسےپوچھ لیا:اہم فیصلےمتوقع

اسلام آباد:لاہوروالوں کےلیے اب تک کیا کیا گیا؟وزیراعظم نے عثمان بزدارسے پوچھ لیا:اہم فیصلے بھی متوقع ،اطلاعات کے مطابق آج وزیراعظم عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب سے اہل لاہورسے کیے گئے وعدوں کےبارے میں پوچھ لیا ہے،

باغی ٹی وی ذرائع کےمطابق اسی سلسلے میں آج وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت لاہور میں انتظامی ڈھانچے کی بہتری کے حوالے سے اٹھائے جانے والے اقدامات پر جائزہ اجلاس ہوا،وزیراعظم کی زیرصدارت اس اہم اجلاس میں وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار چیف سیکرٹری پنجاب اور آئی جی پنجاب نے شرکت کی۔

ذرائع کےمطابق اس موقع پر نئے چیف سیکرٹری پنجاب کامران علی افضل نے وزیراعظم عمران خان کو بریف کیا اوریقین دہانی کروائی گئی کہ پنجاب کے انتظامی فیصلوں میں شفافیت اور میرٹ کو مدنظر رکھا جائے گا ۔

وزیراعظم کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایاگیاکہ صوبے میں مہنگائی پر قابو پانے کے لیےشہریوں کو بنیادی اشیائے خوردونوش کی مناسب نرخوں پر فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کے جا ر ہے ہیں۔ اس کے علاوہ پنجاب میں جاری ترقیاتی منصوبوں کی جلد تکمیل اولین ترجیح ہے۔ پنجاب میں کرپشن اور بدعنوانی کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا۔

وزیراعظم عمران خان کو انسپکٹر جنرل پنجاب سردار علی خان نے صوبہ بھر میں پولیس کی اصلاحی ترجیحات پر بریفنگ دی ۔اس موقع پر وزیراعظم کو بتایا گیا کہ پنجاب پولیس عوام کے بنیادی مسائل اور شکایات کو فوری طور پر حل کرنے کے لیے اقدامات کر رہی ہے۔۔۔

اس موقع پر وزیراعظم نے ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں انتظامی ڈھانچے کو عوام کی سہولت کے لیے مزید موثر بنایا جائے اس کے علاوہ عوام کو اشیائے خوردنوش کی فراہمی کم قیمت پر یقینی بنایا جائے۔۔

وزیراعظم عمران خان نے خصوصی ہدایت کی کہ عوام کی پولیس سٹیشن تک رسائی اور ان کی شکایات کی فوری دادرسی کے لیے موثر میکنزم ترتیب دیا جائے۔

وزیراعظم عمران خان نے خصوصی طور پر زور دیا کہ پولیس کسی بھی قسم کی سیاسی وابستگی سے بالاتر ہو کر عوام کی خدمت اور انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کرے

وزیراعظم کی زیرصدارت ایک اوراجلاس میں صوبے میں ترقیاتی منصوبوں میں پیش رفت خصوصا سوہنا لاہور پراجیکٹ اور دیگر اقدامات پر جائزہ اجلاس میں اہم پہلوزیربحث آئے

اس اہم اجلاس میں وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار ، وزیراعظم کےمعاون خصوصی برائے سیاسی ابلاغ ڈاکٹر شہباز گل ,صوبائی وزیر صنعت محمد اسلم اقبال ،صوبائی وزیر بلدیات میاں محمودالرشید، صوبائی وزیر تعلیم ڈاکٹر مراد راس، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، چیف سیکرٹری پنجاب ، کمشنر لاہوراور دیگر اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

کمشنر لاہور کیپٹن ریٹائرڈ محمد عثمان نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ صوبہ بھر میں تمام متعلقہ صوبائی اداروں کی طرف سےصاف پانی کی فراہمی ،صحت کے شعبے کے علاوہ مرکزی شاہراہوں کی تعمیر و مرمت اور تزئین و آرائش پر خصوصی طور پر توجہ دی جا رہی ہے۔

ایل ڈی اے، لاہور کی مرکزی اور چھوٹی شاہراہوں میں اگلے چھ ماہ میں مرمت اور تزئین و آرائش کا کام مکمل کرے گی۔بریفنگ
۔۔۔واسا صاف پانی کی فراہمی کے علاوہ بارش کے پانی کی سٹوریج کے لئے واٹر ٹینکس اور واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس لگانے پر ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہا ہے۔۔

وزیراعظم کو اجلاس میں بتایا گیا کہ صوبہ بھر میں سرکاری ہسپتالوں میں صحت کی بنیادی سہولتوں کی فراہمی اور صحت کارڈ کی موثر فراہمی کے لیے تن دہی سے کام کیا جا رہا ہے۔کمشنر لاہور نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ سوہنا لاہور پلان کے تحت شہر میں آلودگی صفائی اور دیگر انتظامی مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔

وزیراعظم عمران خان نے لاہور میں آلودگی کے مسائل کے حل کے لیے شجرکاری پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت کی۔ وزیراعظم عمران خان نے لاہور میں شجر کاری کی ترغیب کے لیے پلانٹ فار لاہور کے نام سے مہم شروع کرنے کی ہدایت کی۔

وزیراعظم عمران خان نے حکومت کے عوامی فلاح کے منصوبوں اور دیگر اقدامات ، اور شجر کاری کی اہمیت کے بارے میں عوامی آگاہی پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت کی

وزیراعظم عمران خان نے اسکولوں میں شجرکاری کی اہمیت اجاگر کرنے کے لیے خصوصی انتظامات کرنے کی ہدایت کی۔وزیراعظم نے ہدایت کی کہ لاہور کو عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں، آلودگی کے مسائل کے حل اور شجرکاری میں اضافے کے ذریعے اس کے قدرتی خوشگوار ماحول کو بحال کیا جائے