fbpx

پنجاب سےسیلابی پانی کے ریلےسندھ کےبیراجوں کی جانب بڑھنےلگے

لاہور:پنجاب سے سیلابی پانی کے ریلے سندھ میں داخل ہورہے ہیں جس سے بیراجوں میں پانی کی سطح بڑھ رہی ہے۔ترجمان بیراجز کے مطابق گڈو بیراج پر سیلابی ریلہ 3لاکھ 84ہزار984 کیوسک تک پہنچ گیا ہے۔

گڈو بیراج پرپانی اخراج کا ریلا ساڑھے 3 لاکھ کیوسک سے تجاوز کرگیا ہے۔گڈو بیراج پر 24 گھنٹوں سے درمیانے درجے کا سیلاب برقرار ہے۔

ترجمان بیراجز نےمزید بتایا کہ 24 گھنٹوں میں گڈو بیراج سے نکلنے والا بڑا سیلابی ریلہ سکھر بیراج پر پہنچ جائے گا جب کہ سکھر بیراج پر نچلے درجے کا سیلابی ریلہ ایک ہفتے سے برقرار ہے۔

سکھر بیراج پر سیلابی ریلہ 3 لاکھ 12ہزار814 کیوسک برقرارہے۔سیلابی ریلوں کے باعث سکھر، گھوٹکی اور شکارپور میں کچے کے 50 سے زائد دیہات زیر آب آچکے ہیں۔

محکمہ موسمیات کی جانب سے کراچی ( Karachi ) سمیت سندھ بھر میں تیز بارشوں کا ایک اور نیا الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔

کراچی سمیت سندھ بھر میں اگست میں بھی معمول سے زائد بارشوں ( Monsoon ) کا امکان ہے، جبکہ کراچی میں یومِ عاشور پر بھی بارش ہو سکتی ہے۔کراچی میں 6 سے 9 اگست کے دوران درمیانی شدت کی بارشوں کا امکان ہے۔

سردار سرفراز نے بتایا ہے کہ مون سون کا سسٹم کل سے سندھ پر اثر انداز ہو سکتا ہے، جس کے تحت کراچی میں چند مقامات پر تیز بارش بھی ہو سکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس دوران سندھ کے دیگر اضلاع ٹھٹھہ، بدین، سجاول، عمر کوٹ اور تھر پارکر میں تیز بارش کا امکان ہے۔

چیف میٹرو لوجسٹ سردار سرفراز نے بتایا کہ مون سون کا ایک اور سسٹم 10 اگست سے سندھ پر اثر انداز ہو گا جس کے تحت 11 اگست سے کراچی میں بارش کا سلسلہ دوبارہ شروع ہو سکتا ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ یہ سسٹم 15 اگست تک جاری رہ سکتا ہے، اس سسٹم سے کراچی سمیت سندھ بھر میں تیز بارشوں کا امکان ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق جمعرات 4 اگست کو ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم گرم اور مرطوب رہے گا، تاہم کشمیر، پنجاب، بالائی خیبرپختونخوا اور شمال مشرقی بلوچستان میں چند مقامات پر تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔