fbpx

روہنگیائی مسلمان ایک طرف کورونا تو دوسری آگ کی لپیٹ میں‌ لپٹ گئے

ڈھاکہ: روہنگیائی مسلمان ایک طرف کورونا تو دوسری آگ کی لپیٹ میں‌ لپٹ گئے ،اطلاعات کے مطابق بنگلہ دیش میں ایک کورونا کئیر مرکز میں آگ لگنے کا واقعہ پیش آیا جہاں روہنگیا مہاجر مریض موجود تھے۔

میڈیا کے مطابق آتش زدگی کا واقعہ بنگلہ دیش کے کاکس بازار میں پیش آیا تاہم خوش قسمتی سے جانی نقصان نہیں ہوا۔آتش زدگی کا واقعہ اس کیمپ میں پیش آیا ہے جہاں پر کورونا کے مریض روھنگیا بیمار موجود تھے.

بنگلہ دیش کے فائربریگیڈ محکمے کے مطابق اوخیا شہر میں شام کے سات بجے آگ لگنے کا واقعہ رونما ہوا ہے اور کئی گھنٹوں کی مسلسل کوشش کے بعد آگ کو خاموش کردیا گیا۔ محمکے کے مطابق بارہ مریض کو کیمپ میں موجود تھے انکو بحفاظت ایک اور کیمپ میں منتقل کردیا گیا ہے اور واقعے کی تحقیقات جاری ہیں۔

بعض گواہوں کے مطابق امکانی طور پر شاٹ سرکٹ کی وجہ سے آگ لگی ہے۔ گذشتہ مارچ کو کاکس بازار میں مہاجر کیمپ میں آگ لگنے کا واقعہ رونما ہوا تھا جس میں کم از کم پندرہ مہاجر ہلاک ہوئے تھے اور دس ہزار عارضی رہاشی کمرہ جل گیا تھا۔

مذکورہ کیمپ سال 2017سے آباد ہے جہاں دس لاکھ کے لگ بھگ روہنگیا موجود تھے جو میانمارفوج اور بدھ شدت پسندوں کے خوف سے یہاں پناہ لینے آئے ہیں۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!