سپریم کورٹ آف پاکستان کا حکم ہے میں کیا‌کرسکتا ہوں :عارف علوی نے صاف جواب دے دیا

0
34

کراچی: سپریم کورٹ آف پاکستان کا حکم ہے میں کیا‌کرسکتا ہوں :عارف علوی نے صاف جواب دے دیا،اطلاعات کے مطابق صدرِ مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ سرکاری محکموں کی ملی بھگت سے رفاعی پلاٹوں کو رہائشی بنایا گیا، چیف جسٹس نے غیر قانونی تعمیرات روکنے کے احکامات جاری کیے۔

ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ کے حکم پر منہدم کی جانے والی عمارات، رہائشی گھروں، پلازہ اور الہ دین پارک کے متاثرین نے صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی سے کراچی گورنر ہاؤس میں ملاقات کی۔

صدر مملکت نے کہا کہ ’محکموں کی ملی بھگت سے رفاعی پلاٹوں کو رہائشی مقصدکیلئےاستعمال کیاجاتا رہا ہے، چیف جسٹس نے ایسے پلاٹوں پر غیرقانونی تعمیر روکنےکے احکامات جاری کئے ہیں‘۔وہ سپریم کورٹ کے حکم کے سامنے بغاوت نہیں کرسکتے

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ ’بلڈرز اپنے رویے تبدیل کریں اور معاملات کو ذمہ داری سے نمٹائیں، عدالتی احکامات سے 40 سے 50 ہزارخاندان متاثر ہوں گے‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ غیرقانونی تعمیرات میں ملوث افسران کے خلاف بھی کارروائی کا حکم دیاجاناچاہیے۔

اس موقع پر ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈویلپمنٹ آف پاکستان کے ممبران، نسلہ ٹاور، گجر اور اورنگی نالہ کے رہائشیوں نے صدر کو اپنے خدشات سے آگاہ کیا، ملاقات میں الہ دین پارک، ساؤتھ سٹی اسپتال کے نمائندے بھی شریک نے جنہوں نے اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔

متاثر افراد نے صدر مملکت سے دہائی کی کہ عدالتی حکم کے مطابق کراچی میں 900 کے قریب رہائشی عمارتیں منہدم کی جائیں گی۔ متاثرین نے صدر سے اپنےخدشات دور کرنے میں کردار ادا کرنے کی درخواست بھی کی۔

ذرائع کے مطابق اس پرصدر نے متاثرین سے وعدہ کیا کہ وہ اس سلسلے میں حکومت کی طرف سے متاثرین کی بھرپورمدد کریں گے تاکہ پریشان حال لوگوں کی تکلیف کا مداوا ہوسکے

Leave a reply