ورلڈ ہیڈر ایڈ

نمبر 7 کے خواص

اس نمبر سے منسلک افراد نہت باریک بین اور دور اندیش قسم کے لوگ ہوتے ہیں یہ نمبر اپنی سوچ کو دوسروں کے مشورے یا رائے پر مقدم رکھنے والوں کا ہے اکثریت کی رائے سے اختلاف کرنے کی جرات رکھتے ہیں اور اس کے نتیجے میں ہونے والے نقصان کو سہنے کی صلاحیت بھی رکھتے ہیں
اپنی قوت ارادی پر غضب کا بھروہ کرنے والے یہ لوگ دوسروں کے طرز عمل کی پرواہ کئے بغیر عمل پیرا ہونے والے ہوتے ہیں ہر وقت کام اور انتھک محنت ان کی زندگی کا بنیادی مقصد ہوتا ہے فطرتاً سکون پسند خاموش طبع اور اچھی قوت برداشت کے مالک ہوتے ہیں بڑے سے بڑے خطرات میں بھی اپنے اصولوں کو قربان نہیں ہونے دیتے اصولوں کی پابندی اور مستقل مزاجی کی وجہ سے دوسرے انہیں زیادہ پسند نہیں کرتے بہت کم وقت میں بہت دور تک سوچتے ہیں
یہی دوربینی ان کے لئے نئی راہیں کھولتی ہے لہذا اسکا منفی پہلو بھی ہوتا ہے کہ دوسروں پر اعتماد کرنے والے ان کو خود اپنی شخصیت کے آئینے میں دیکھنے کے عادی ہوتے ہیں اسی لیے موقع پرست اور ہوشیار لوگ ان کے اعتماد کا غلط فائدہ اٹھا سکتے ہیں دوسروں کے کام آکر سکون اور راحت محسوس کرتے ہیں
گلط ذرائع سے دولت کمانے کی طرف راغب نہیں ہوتے فطرتاً کم گو اور کم آمیز ہوتے ہیں دال کے صاف ہونے کے باوجود عام لوگ انہیں متکبر خیال کرتے ہیں کیونکہ اپنی احتیاط پسندی کی وجہ سے کسی کے ساتھ جلد بے تکلف نہیں ہوتے ان لوگوں کو زندگی میں غیر متوقع مسائل کا سامنا رہتا ہے زندگی میں انہیں سفر سے بہت واسطہ رہتا ہے
اہل خانہ ماں باپ اور بہن بھایئوں کی ضروریات کا خیال رکھنے والے اور اپنے آرام پر ان کے آرام کو ترجیح دینے والے ہوتے ہیں روھانیت اور علوم خفیہ سے دلچسپی رکھنے والے یہ لوگ سائنی تعلیم اور تحقیق کے کاموں کے لئے نہایت مناسب ہوتے ہیں یہ لوگ یا تو چھوٹی عمر میں یا یا آغز جوانی میں ہی رشتہ ازدواج میں منسلک ہو جاتے ہیں اور اگر کسی وجہ سے ایسا نہ ہو سکے تو یہ غیر معینہ مدت تک تنہا زندگی گزارتے ہیں
اگر ان کی شادی نمبر 47 اور 9 کے ساتھ ہو جائے تو وقت اچھا گزر سکتا ہے جبکہ نمبر 2 اور 6 کے ساتھ ان کا بناہ مشکال ہوتا ہے انہیں شادی کے لئے نمبر 1 اور 8 سے پرہیز کرنا چاہئے مہینے کی 7 ، 16 اور 25 تاریخ کو پیدا ہونے والے اسی نمبر کے تحت آتے ہیں 25 تاریخ ان لوگوں کے لیے خاص اہمیت کی حامل ہے تمام ایسے بڑے اعداد جن کا مفرد 7 بنتا ہو وہ ان کے لئے بہت بابرکت ہوتے ہیں 43 ، 52، 152 وغیرہ

یہ لوگ کسی سے مدد لینے یا ادھار لے کر بسر اوقت کرنے پر یقین نہیں رکھتے بلکہ اپنی ضرورت کے مطبق محنت کر کے کمانے اور برے حالات کے لئے بچانے کے فلسفے پر عمل پیرا ہوتے ہیں