fbpx

ٹریجڈی کنگ دلیپ کمار کی پہلی برسی

ٹریجڈی کنگ کہلائے جانے والے اداکار دلیپ کمار کی آج پہلی برسی ہے. دلیپ کمار نے 1944 میں جوار بھاٹا سے اپنے فلمی کیرئیر کی شروعات کی اس فلم نے زیادہ کامیابی حاصل نہیں کی اس کے بعد انہوں نے فلم جگنو میں میڈم نور جہاں کے مد مقابل کام کیا یہ فلم سپر ہٹ ہوئی ۔1949میں انہوں نے راج کپور اور نرگس کے ساتھ فلم انداز کی یہ فلم بھی سپر ہٹ ہوئی اس کے بعد دلیپ کمار نے پیچھے مڑ کر نہ دیکھا۔ دیوداس ،نیا دور ،رام اور شیام ،مدھو متی ،ودھاتا ،کرانتی اور شکتی جیسی فلموں میں انہوں نے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا کر ثابت کیا کہ ان سے بہتر اداکار کوئی نہیں۔ دلیپ کمار نے سنجیدہ اداکاری کے ساتھ کامیڈی کردار بھی کئے کامیڈی کرداروں کے ساتھ بھی دلیپ کمار نے بھرپور انصاف کیا۔دلیپ کمار نے پینسٹھ سے زائد

فلموں میں کام کیا۔ مغل اعظم ان کے کیرئیر کی ایسی فلم تھی جو ہر حوالے سے یادگار ہے اس فلم میں ان کے ساتھ مدھوبالا تھیں اور کہا جاتا ہے کہ اس فلم کی شوٹنگ کے دوران مدھوبالا اور دلیپ کمار کے درمیان نفرت کی ایک دیوار کھڑی ہو چکی تھی لیکن اس کے باوجود دونوں نے دیکھنے والوں کو گمان تک نہ ہونے دیا ۔دلیپ کمار کو ان کی بہترین اداکاری پر کئی یوارڈز بھی ملے۔1954میں وہ بہترین اداکار کے لئے فلم فئیر جیتنے والے پہلے اداکار تھے ،انہوں نے یہ ایوارڈ آٹھ بار جیتا۔ انہیں دادا صاحب پھالکے اور پدما بھوشن ایوارڈ سے نوازا گیا ۔ پاکستان نے 1998 میں دلیپ کمار کو نشان امتیاز سے بھی نوازا۔