fbpx

ٹوئٹر انتظامیہ نے کمپنی ایلون مسک کو بیچنے کا فیصلہ کرلیا

ٹوئٹر انتظامیہ نے کمپنی دنیا کے امیر ترین شخص ایلون مسک کو بیچنے کا فیصلہ کرلیا امریکی کاروباری جریدے بلومبرگ کا کہنا ہے کہ ٹوئٹر کی فروخت کا معاہدہ آج ہی فائنل ہونے کا امکان ہے۔

باغی ٹی وی : میڈیا رپورٹس کے مطابق ٹوئٹر بورڈ کے 11 رکنی بورڈ ممبرز نے اتوار کو کمپنی خریدنے کے حوالے سے ایلون مسک کی پیشکش پر میٹنگ ہوئی، جس میں کمپنی کو 46.5 بلین ڈالرز کی پیشکش پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ایلون مسک کا ٹویٹرکمپنی کے بورڈ میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دو بورڈ اراکین نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ٹوئٹر کے شیئر ہولڈرز جلد ایلون مسک سے ملاقات بھی کریں گے، جس میں معاہدے سے متعلق گفتگو کی جائے گی-

بعد ازاں اس حوالے سے برطانوی اخبار انڈیپنڈنٹ نے بتایا کہ 9 اپریل کو ایلون مسک نے ٹوئٹر کے نو فیصد شیئرز خریدے اور اس کے سب سے بڑے شیئر ہولڈر بن گئے اس کے بعد 14 اپریل کو ایلون مسک نے 54.20 ڈالر فی شیئر کے ریٹ پر 43 ارب ڈالر میں پوری کمپنی خریدنے کی پیشکش کی تھی۔ انہوں نے اپنی اس پیشکش کو "بیسٹ اینڈ فائنل آفر” کا نام دیا تھا تاہم ٹوئٹر انتظامیہ نے ابتدائی طور پر اسے قبول کرنے سے انکار کردیا تھا۔

ٹوئٹر کے پانچ فیصد سے زائد کے حصے دار سعودی شہزادے ولید بن طلال نے بھی ایلون مسک کی آفر قبول کرنے سے انکار کردیا تھا ان کا کہنا تھا کہ مسک کی ٹوئٹر کے لیے دی گئی پیشکش اس کی گروتھ کی قدر کے مطابق نہیں-

ایلون مسک ٹوئٹر بورڈ آف ڈائریکٹر میں شامل

بلومبرگ کا کہنا ہے ایلون مسک نے جس وقت ٹوئٹر خریدنے کی پیشکش کی تھی اس کے بعد انہوں نے سرمائے کاانتظام بھی مکمل کرلیا ہے گزشتہ ہفتے وہ ٹوئٹر خریدنے کیلئے مطلوبہ رقم جمع کرچکے تھے تاہم ٹوئٹر انتظامیہ یہ دیکھ رہی ہے کہ ایلون مسک کے خلاف کوئی سرکاری تحقیقات تو نہیں چل رہیں بلومبرگ کا کہنا ہے کہ ٹوئٹر کی فروخت کا معاہدہ آج ہی فائنل ہونے کا امکان ہے۔

ایلون مسک نے ٹوئٹر کے 3 ارب ڈالرز مالیت کے شیئرز خرید لئے

اس سے قبل امریکی کمپنی ٹیسلا کے مالک ایلون مسک کا کہنا تھا کہ وہ سوشل میڈیا سروس سے متعلق ٹوئٹر میں کچھ خامیاں دیکھتے ہیں اور اسے دنیا بھر میں آزادی اظہار رائے کے پلیٹ فارم میں تبدیلی کرنا چاہتے ہیں واضح رہے کہ ٹوئٹر پر ایلون مسک کے اس وقت 83.3 ملین سے زیادہ فالوورز ہیں۔

ایلون مسک کا ٹوئٹر کو خریدنے کا فیصلہ، کمپنی کو اربوں ڈالرز کی پیشکش بھی کردی