عرب امارات نے غیرملکی مردوں کی خوشیوں کا بندوبست کردیا ، کیسے ؟ ضرور جانیئے

دبئی:متحدہ عرب امارات نے کام کرنے والی غیر ملکی خواتین کو سپانسر کرتے ہوئے اجازت دے دی ہے کہ اب وہ اپنے مرد حضرات بھی ورک پرمٹ حاصل کرسکیں گے۔

یو اے ای وزارت انسانی وسائل کے اعلامیے میں بتایا گیا کہ نئے قانون کے تحت خاندان کی اسپانسر شپ پر آنے والے مرد حضرات بھی ورک پرمٹ حاصل کرسکیں گے۔

حکومت کی طرف سے جاری کیے گئے اعلامیے کے مطابق آجروں کو اس سلسلے میں ورک پرمٹ کی فراہمی شروع کردی گئی ہے۔آجروں کو ایسے افراد کو روزگار پر رکھنے کی اجازت ہوگی جو اپنے خاندان کی اسپانسرشپ پر متحدہ عرب امارات میں مقیم ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل ورک پرمٹ صرف ان خواتین کو دیے جاتے تھے جو اپنے خاندان کی اسپانسرشپ پر یواے ای میں مقیم تھیں۔دوسری طرف وزارت انسانی وسائل کا کہنا ہے کہ اس قانون کو متعارف کرانے کا مقصد کمانے کے لیے وسائل فراہم کرنا ہے تاکہ متحدہ عرب امارات میں مقیم خاندان مستحکم رہ سکیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.